Monday , July 16 2018
Home / Top Stories / ٹرمپ کی طبی جانچ کے صدفیصد مثبت نتائج

ٹرمپ کی طبی جانچ کے صدفیصد مثبت نتائج

= دماغی فتور کے کوئی آثار نہیں، بصارت، ناک، کان اور دماغ فعال
= وزن 108 کیلو اور قد چھ فٹ 3 انچ
= ملٹری ڈاکٹر رونی جیکسن کی تفصیلی رپورٹ

واشنگٹن۔17 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ کا طبی معائنہ مکمل ہوچکا ہے اور ان کا ٹسٹ کرنے والے ڈاکٹر نے انہیں صد فیصد فٹ بتایا ہے اور کہا کہ اس وقت مسٹر ٹرمپ کی صحت قابل رشک ہے اور ان پر کئے گئے تمام ٹسٹوں میں انہیں بہترین صحت کا حامل شخص قراردیا گیا۔ یاد رہے کہ امریکی صدور کی ہر سال مکمل طبی جانچ پڑتال کی جاتی ہے۔ ٹرمپ کے بھی وائٹ ہائوس میں ایک سال مکمل ہونے میں صرف کچھ ہی دن باقی ہیں اور ان کی دماغی حالت پر کی جانے والی تشویش کو مدنظر رکھتے ہوئے ان کی طبی جانچ پڑتال کے نتائج سے عوام کو بھی باخبر رکھنے کی بات کہی گئی تھی۔ امریکہ میں حالیہ دنوں میں شائع ہوئی ایک کتاب کے کچھ اقتباسات میں یہ انکشاف کیا گیا تھا کہ ٹرمپ کی دماغی حالت کے بارے میں خود ان کے قریبی رفقاء بھی تشویش میں مبتلا ہیں اور اس طرح ان کی طبی جانچ ناگزیر ہوگئی تھی۔ بہرحال اس تنازعہ کو لے کر ٹرمپ نے خود بھی ٹوئٹ کرتے ہوئے وصاحت کی تھی کہ وہ اس وقت صحت مند ہیں۔ امریکی بحریہ کے ریئر ایڈمرل ڈاکٹر رونی جیکسن نے اپنی رپورٹ میں واصح طور پر بتایا ہے کہ ٹرمپ کی طبی جانچ پڑتال کے بعد یہ بات یقینی طور پر کہی جاسکتی ہے کہ موصوف اس وقت بے حد صحت مند ہیں اور صحت کے مستحکم ہونے کا اس سے بڑا ثبوت کیا ہوسکتا ہے کہ ڈاکٹر نے یہ تک کہا ہے کہ ٹرمپ اپنی صدارت کے مابقی تین سالہ میعاد تک طبی طور پر فٹ رہیں گے۔ ڈاکٹر جیکسن نے اس سلسلہ میں وائٹ ہائوس میں ایک خصوصی پریس کانفرنس طلب کی تھی جو ایک گھنٹے تک جاری رہی جہاں انہوں نے اخباری نمائندوں کو بتایا کہ ٹرمپ کی طبی جانچ پڑتال ملٹری ڈاکٹرس نے انجام دی جس کا سلسلہ تین گھنٹوں تک جاری رہا۔ ٹرمپ نے ان سے کاگنیٹیو ٹسٹ کرنے کے لیے کہا تھا حالانکہ قانونی طور پر اس کی کوئی ضرورت نہیں تھی تاہم مونٹریال کاگنیٹیو اسیسمنٹ معمول کے مطابق رہا جس میں انہیں 30 کے منجملہ 30 نمبر ملے جس سے یہ ظاہر ہوجاتا ہے کہ انہیں صحت کا کوئی مسئلہ لاحق نہیں اور نہ وہ کسی بیماری میں مبتلا ہیں جیسے الزامیر وغیرہ۔ ڈاکٹر جیکسن نے کہا کہ صدر موصوف انتہائی چاق و چوبند ہیں اور جس وقت انہوں نے مجھ سے بات چیت کی اس وقت وہ بے حد مستعد نظر آرہے تھے اور اپنے روزمرہ کے فرائض انجام دینے میں انہیں کسی بھی مشکلات کا سامنا نہیں کرنا پڑے گا۔ جب ڈاکٹر جیکسن سے وہاں موجود صحافیوں نے ڈسمبر میں مشرق وسطی کے بارے میں ٹرمپ کی تقریر کے دوران ان کی آواز میں تبدیلی کے بارے میں پوچھا تو انہوں نے کہا کہ ایسا سوڈافیڈ نامی دوا کے استعمال سے ہوا ہوگا جو بند ناک کھولنے کے لیے استعمال کی جاتی ہے۔ آپ لوگ بھی کبھی نہ کبھی اس دور سے گزرے ہوں گے کہ آپ کی ناک شدید سردی کی وجہ سے بند ہوگئی ہو اور اسے کھولنے اور آسانی سے سانس لینے کے لیے آپ نے کسی دوا کا استعمال کیا ہو۔ ٹرمپ کے قلب کی جانچ پڑتال بھی کی گئی جس کے بعد انہیں قلب کے کسی بھی مرض میں مبتلا نہیں پایا گیا۔ جہاں تک ان کے وزن اور قد کا سوال ہے تو ٹرمپ کا وزن 108 کیلو گرام ہے اور ان کا قد 6 فٹ 3 انچ ہے البتہ اس بات کے امکانات ہیں کہ آئندہ کچھ ہفتوں میں ان کا وزن 10 تا 15 پونڈس کم ہوجائے گا چونکہ ٹرمپ تمباکو اور الکوحل (شراب) کا زائد استعمال نہیں کرتے لہٰذا ان کے قلب کی کارکردگی بدستور عمدہ رہے گی۔ البتہ وزن میں فوری کمی کے لیے انہوں نے ٹرمپ کو پرہیز اور ورزش کرنے کی صلاح دی ہے۔ ٹرمپ کی بصارت، دماغ، کان، آنکھیں اور ناک بالکل ٹھیک ٹھاک ہیں۔ ڈاکٹر جیکسن نے کہا کہ بعض لوگ نسلی طور پر مضبوط ہوتے ہیں تاہم میں نے صدر موصوف سے کہا کہ اگر گزشتہ 20 سالوں کے دوران انہوں نے صحت بخش اور پرہیزی، غذا کا استعمال کیا ہے تو یہ بھی ممکن ہے کہ وہ 200 سال کی عمر پائیں۔ انہوں نے کہا کہ صدر موصوف کو انہوں نے کبھی بھی ذہنی الجھن، دبائو یا تھکا ہوا نہیں دیکھا۔

…کاش ٹرمپ نے صحیح وزن بتانے والی مشین استعمال کی ہوتی: فلم ڈائرکٹر
لاس اینجلس ۔ 17 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) ٹرمپ کے ملٹری ڈاکٹر رونی جیکسن نے جس طرح ’’متوقع‘’ طبی رپورٹ پیش کی ہے اس پر ہالی ووڈ کے مشہور فلم ڈائرکٹر جیمس گن جن کی حالیہ دنوں میں ’’گارڈینس آف دی گیلاکسی‘‘ کو بے حد مقبولیت حاصل ہوئی تھی، نے طبی رپورٹ کا مضحکہ اڑاتے ہوئے کہا کہ اگر ٹرمپ اپنا وزن صحیح وزن باتنے والی مشین پر کروائیں تو وہ (گن) ایک لاکھ ڈالرس بطور عطیہ خزانے میں جمع کروادیں گے۔ یاد رہے کہ طبی جانچ پڑتال کے نتائج کو آج برسر عام کیا گیا جس پر مسٹر گن نے اپنے ردعمل کا اظہار کیا۔ انہوں نے کہا کہ ٹرمپ کا وزن 108 کیلوگرام بتایا گیا ہے۔ یہاں یہ بات قابل یقین ہے کیوں کہ ان کے ہاتھ کو بہت ہی ہلکے پھلکے ہیں۔ اگر ٹرمپ غیر جانبدار طبی پروفیشنلز کی خدمات حاصل کرتے ہوئے صحیح وزن بانے والی مشین پر کھڑے ہوجائیں تو وہ ٹرمپ کی پسندیدہ چہارٹیں ایک لاکھ ڈالرس بطور عطیہ جمع کروائیں گے۔ مسٹر گن نے ٹرمپ کے علاوہ بیس بال کھلاڑی البرٹ پوجولس کی تصاویر بھی اپ لوڈ کی ہیں جس کا وزن 240 پونڈس ہے اور قد ٹرمپ کے مماثل یعنی 6′.3″ ہے جبکہ ٹرمپ کا وزن 240 پونڈس بتایا گیا ہے۔ مسٹر گن نے کہا کہ اگر مسٹر ٹرمپ کی ڈیمنشیا (یادداشت) رپورٹ بھی بالکل صحیح ہے تو سمجھ لیجئے کہ ہماری شامت آگئی۔

TOPPOPULARRECENT