Monday , November 20 2017
Home / دنیا / ٹرمپ کی ٹیم سے سیکریٹ سرویس کی پوچھ تاچھ

ٹرمپ کی ٹیم سے سیکریٹ سرویس کی پوچھ تاچھ

ہلاری کے خلاف گن رائیٹس کے حامیوں کو اکسانے کا شاخسانہ
واشنگٹن ۔ 11 اگست (سیاست ڈاٹ کام) یو ایس سیکریٹ سرویس (یو ایس ایس ایس) کے عہدیداروں نے ڈونالڈ ٹرمپ کی مہم کے ذمہ داروں سے ہلاری کلنٹن کے خلاف ان کی متنازعہ تبصروں کے تعلق سے بات کی ہے کیونکہ انہوں نے کہا تھا کہ اسلحہ رکھنے کے حامیوں کی جانب سے ہلاری کو وائیٹ ہاؤز پہنچنے کی ان کی کوشش سے روکا جاسکتا ہے۔ یو ایس سیکریٹ سرویس کے عہدیدار نے سی این این کو بتایا کہ یو ایس ایس ایس نے ٹرمپ کی ٹیم سے دوسری ترمیم سے متعلق ان کے تبصروں کی بابت پوچھا ہے۔ اس موضوع پر ایک سے زائد مرتبہ بات ہوئی ہے لیکن ابھی یہ غیرواضح ہیکہ سیکریٹ سرویس اور ٹرمپ کی ٹیم کے درمیان کس نوعیت کی گفتگو ہوئی ہے۔ یو ایس ایس ایس امریکہ کے قدیم ترین وفاقی قانون نافذ کرنے والے اداروں میں سے ہے اور صدر کی سیکوریٹی کیلئے ذمہ دار ہونے کے ساتھ ساتھ دو صدارتی امیدواروں کی سیکوریٹی بھی اسی ادارہ کے سپرد ہے۔ ٹرمپ کی ٹیم نے یو ایس ایس ایس کو بتایا کہ ریپبلکن صدارتی امیدوار کا مقصد ڈیموکریٹک حریف کے خلاف تشدد پر اکسانا نہیں تھا لیکن 70 سالہ بی ایس ایف عرب پتی نے سی این این کی رپورٹ مسترد کردی ہے۔ ٹرمپ نے ٹوئیٹر پر کہا کہ اس طرح کی کوئی میٹنگ یا گفتگو کبھی نہیں ہوئی۔ یہ تنازعہ منگل کو اس وقت چھڑ گیا جب ٹرمپ نے ایک ریالی میں کہا کہ دوسری ترمیم کی مدافعت کرنے والے ہوسکتا ہے ہلاری کلنٹن کو روکنے میں کامیاب ہوں گے کہ وہ سپریم کورٹ کیلئے ایسے جسٹس مقرر نہ کرسکے جو گن رائیٹس کو کمزور کردیں گے۔ ٹرمپ نے کہا تھا کہ ہلاری دوسری ترمیم کو لازماً ختم کردینا چاہتی ہے۔ اگر وہ اپنی پسند کے ججس منتخب کرنے میں کامیاب ہوجائے تو آپ گن رائیٹس کے حامی کچھ نہیں کر پائیں گے۔

TOPPOPULARRECENT