Saturday , November 18 2017
Home / Top Stories / ٹرمپ کی پیرس آمد، فرانس معاہدہ پر موقف بدلنے کا اشارہ

ٹرمپ کی پیرس آمد، فرانس معاہدہ پر موقف بدلنے کا اشارہ

پیرس ۔ 13 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) فرانس نے آج ڈونالڈ ٹرمپ کا سرخ قالین پر استقبال کیا جو سرکاری دورے پر پہنچے ہیں۔ امریکی صدر کا مختصر 24 گھنٹے کا سفر جمعہ کو فرانس کے قومی دن کے موقع پر ہورہا ہے۔ فرسٹ لیڈی میلانیا ٹرمپ کے ہمراہ 71 سالہ ٹرمپ نے بطور صدر پہلی مرتبہ فرانسیسی سرزمین پر اس امید کے ساتھ قدم رکھا کہ اس دورے سے وطن میں عوام کی توجہ ان شدید الزامات سے ہٹ جائے گی کہ اُن کی فیملی اور داخلی گوشہ نے روس کے ساتھ گٹھ جوڑ کرکے 2016ء کا یو ایس الیکشن جیتا ہے۔ دریں اثناء ٹرمپ نے اشارہ دیا کہ وہ تبدیلی ماحول سے متعلق پیرس معاہدہ پر اپنا موقف تبدیل کرسکتے ہیں۔ وہ اپنے فرانسیسی ہم منصب ایمانیول میکرن کے ساتھ بات چیت کے بعد مخاطب تھے۔ انھوں نے میکرن کے ساتھ جوائنٹ نیوز کانفرنس میں کہا کہ پیرس معاہدہ کے تعلق سے کچھ (نیا) ہوسکتا ہے۔ چھ ہفتے قبل انھوں نے اعلان کیا تھا کہ امریکہ 2015ء کے معاہدہ سے دستبردار ہوجائے گا۔ ’’ہم دیکھیں گے کیا ہوتا ہے۔‘‘ 39 سالہ فرانسیسی لیڈر میکرن نے کہا کہ وہ ٹرمپ کے فیصلے کا احترام کرتے ہیں لیکن فرانس اس معاہدہ کا بدستور پابند عہد ہے۔ ٹرمپ اپنے دورہ میں فرانس کی قومی تقریبات میں بطور اعزازی مہمان شرکت کریں گے۔ پیرس میں یوم باسل تقریبات کا انعقاد ہورہا ہے اور ٹرمپ کی شرکت یقینی ہے۔ صدر فرانس میکرن او ر ٹرمپ توقع ہیکہ شام میں جاری خانہ جنگی ا ور عالمی سطح پر دہشت گردی سے وسیع تر پیمانے پر نمٹنے نئی حکمت عملی وضع کرنے کے موضوعات پر بھی تبادلہ خیال کریں گے۔ ٹرمپ کے پیرس معاہدہ سے علحدہ ہوجانے پر یوروپ نے شدید تنقیدیں کی تھیں۔ تاہم سیاسی تجزیہ نگاروں کے مطابق دونوں قائدین امریکہ کے پیرس معاہدہ سے دستبرداری کو فراموش کرتے ہوئے نئے سرے سے تعلقات کے استحکام پر زور دیں گے۔

TOPPOPULARRECENT