Thursday , December 14 2017
Home / Top Stories / ٹرمپ کے دورہ مشرق وسطیٰ کے عالمی سطح پر بحران کن اثرات

ٹرمپ کے دورہ مشرق وسطیٰ کے عالمی سطح پر بحران کن اثرات

عرب اور مسلم ممالک میں اختلافات ، قطر سعودی عرب تنازعہ سے پاکستان کی معیشت بھی مشکلات سے دوچار
دبئی ۔ 14جولائی (سیاست ڈاٹ کام ) امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے دورہ سعودی عرب کے جہاں سیاسی و سفارتی نتائج عالمی منظر نامے پر دیکھے جارہے ہیں، وہیں اقتصادی میدان میں بھی امریکہ سعودی عرب اتحاد کے منفی نتائج ظاہر ہونا شروع ہو گئے ہیں۔امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ کے دورہ سعودی عرب کے جہاں سیاسی و سفارتی نتائج عالمی منظر نامے پر دیکھے جارہے ہیں، وہیں اقتصادی میدان میں بھی امریکا سعودی عرب اتحاد کے منفی نتائج ظاہر ہونا شروع ہو گئے ہیں۔ اس تمام کہانی سے سب سے زیادہ قطر ہی متاثر ہوا ہے۔ سعودی عرب نے لیبیا بحرین یمن مصر اور متحدہ عرب امارات کے ساتھ مل کر نہ صرف قطر پر دہشت گردی کا الزام عائد کیا ہے بلکہ سفارتی و اقتصادی بائیکاٹ بھی کر دیا ہے اور پاکستان سمیت ان ممالک پر بھی دباؤ ڈالنا شروع کردیا ہے، جو قطر سے تجارت یا کوئی بھی لین دین کرتے ہیں۔معاشی امور کی ماہر ڈاکٹر شاہدہ وزارت کے مطابق اگرچہ پاکستان اور قطر کے درمیان دو طرفہ تجارت کا حجم قابل ذکر نہیں لیکن توانائی کی قلت سے دوچار پاکستان قطر سے سالانہ پینتیس لاکھ ٹن مائع گیس یعنی ایل این جی درآمد کر رہا ہے۔ اگر اس منصوبے کو کوئی نقصان پہنچتا ہے تو اس کے منفی اثرات پاکستان کے صنعتی شعبے پر بھی نمایاں ہو سکتے ہیں۔ پاکستان سعودی عرب اور قطر کے درمیان ثالثی کی کوشش کر رہا ہے جبکہ پاکستان کے تاجر و صنعت کار بھی انسانی ہمدردی کی خاطر قطر کو غذائی اشیا پہنچانے میں سنجیدہ ہیں لیکن یہ معاملہ اتنا آسان نہیں جتنا نظر آتا ہے۔

TOPPOPULARRECENT