Sunday , November 19 2017
Home / Top Stories / ٹرمپ کے شخصی ریمارکس سے ان کی بوکھلاہٹ آشکار : ہلاری

ٹرمپ کے شخصی ریمارکس سے ان کی بوکھلاہٹ آشکار : ہلاری

جوئے خانے دیوالیہ کرنے کے بعد اب امریکی معیشت کی باری، انتخابی ریالی سے خطاب
رالے ۔(یو ایس) ۔ 23 جون (سیاست ڈاٹ کام) ڈیموکریٹک امکانی صدارتی امیدوار ہلاری کلنٹن نے آج اپنے ری پبلکن حریف ڈونالڈ ٹرمپ پر جوابی وار کرتے ہوئے کہا کہ موصوف ان پر شخصی ریمارکس اس لئے کررہے ہیں کہ وہ خود اپنے خلاف سوالات کے جواب دینے سے قاصر ہیں۔ ایسے حقائق جو ان کی قلعی کھول دینے کیلئے کافی ہیں، ان سے گریز کرنا ٹرمپ کی چال رہی ہے۔ شمالی کیرولینا کے اس اہم شہر میں ایک انتخابی ریالی سے خطاب میں انہوں نے کہا کہ ٹرمپ انہیں (ہلاری) اول درجہ کی جھوٹی کہتے ہیں اور وہ ایسا اس لئے کہہ رہے ہیں کہ خود ان کا بال بال قرضوں میں ڈوبا ہوا ہے اور اس بارے میں اگر کوئی ان سے سوال پوچھے تو ہمیشہ ٹال مٹول سے کام لیتے ہیں۔ امریکی معیشت کو بھی وہ قرضوں کے سمندر میں ڈبونے والے ہیں۔ ایسا لگتا ہے کہ کل کی گئی میری تقریر نے انکے ہوش اڑا دیئے اسلئے انہوں نے ٹوئیٹر پر شخصی ریمارکس کرکے میرے مذہبی عقیدہ پر شبہ کا اظہار کیا جو ایک سچاعیسائی دوسرے عیسائی کے ساتھ نہیں کرسکتا۔

ایک ایسی عالمی فلاحی تنظیم جو دنیا میں ہر ضرورتمند کیلئے اپنا دست تعاون دراز کرتی ہے اس کو بھی ٹرمپ نے نشانہ بنایا۔ ہلاری کا اشارہ کلنٹن فاونڈیشن کی جانب تھا جو ہلاری اور انکے شوہر و سابق صدر بل کلنٹن کی نگرانی میں چلایا جاتا ہے۔ میرا دعویٰ ہیکہ جوئے خانے چلانے والا شخص کسی کی مدد، فلاح و بہبود اور غریبوں کی مسیحائی کے بارے میں بھلا کیسے جان سکتا ہے۔ کلنٹن فاؤنڈیشن کے ذریعہ دنیا کے غریب بچوں کی بھرپور امداد کی جاتی ہے۔ ایڈس سے متاثرہ افراد کیلئے ادویات کا انتظام فاؤنڈیشن کی ہی جانب سے کیا جاتا ہے۔ٹرمپ تو ان غریبوں کا استعمال اپنے سوٹ اور ٹائی کیلئے کرتے ہیں۔ جس طرح انہوں نے اپنے جوئے خانوں کو دیوالیہ کردیا ہم نہیں چاہتے کہ امریکی معیشت کو بھی دیوالیہ کردیں۔ ہم امریکہ کی تاریخ میں نیا باب رقم کرنا چاہتے ہیں جو ٹرمپ کے بس کی بات نہیں۔ امریکہ میں ماہرین معاشیات کا خیال ہیکہ ٹرمپ امریکہ کا خزانہ خالی کردیں گے۔

اس ہفتہ سینیٹر جان میک کین کے معاشی مشیروں میں ایک نے کہا کہ ٹرمپ کی پالیسیاں امریکہ میں 3.5 ملین افراد کو بیروزگار کردیں گی۔ ٹرمپ نے مالداروں کو ٹیکس کٹوتی کی مراعات فراہم کرنے کا وعدہ کیا ہے اس سے امریکہ کا قومی سطح پر قرض کا بوجھ 30 کھرب ڈالر ہوجائے گا۔ ہلاری نے کہا کہ طلباء کے تئیں بھی ٹرمپ کا نظریہ ہمدردانہ نہیں ہے۔ کالج کی تعلیم سب کی دسترس میں ہو اسکے بارے میں ٹرمپ مثبت رائے نہیں رکھتے۔ ان کے پاس امریکی انفراسٹرکچر کی تعمیرنو کیلئے کوئی منصوبہ نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ مسلمانوں کو روکنے کیلئے جو ’بلند دیوار‘ موصوف تعمیر کروانا چاہتے ہیں، اسکے سوائے انکے پاس کوئی منصوبہ نہیں جس میں روزگار کے مواقع پیدا کرنا بھی شامل ہے لیکن ٹرمپ کے سارے وعدے کھوکھلے ہیں جن پر (صدر بننے کی صورت میں) کبھی عمل آوری نہیں ہوسکتی۔ ٹرمپ ہمیشہ یہ جملہ استعمال کرنے کیلئے مشہور ہیں ’’یو آر فائرڈ‘‘ (آپ کو نوکری سے نکال دیا گیا)۔ اب بھلا ایسا شخص ملازمتوں کے مواقع کیسے پیدا کرے گا۔ بوکھلاہٹ کا شکار ٹرمپ اسی لئے شخصی ریمارکس کرنے پر اتر آئے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT