ٹریفک پولیس کی تلاشی مہم کے دوران حالت نشہ میں نوجوان کا پولیس پر حملہ

ملزم کے خلاف مقدمہ درج، سوشیل میڈیا پر ویڈیو وائرل
حیدرآباد ۔ 10 فروری (سیاست نیوز) شہر میں ٹریفک پولیس پر حملہ کا افسوسناک واقعہ پیش آیا۔ نشہ کی حالت میں دھت نوجوان تلاشی کے دوران اچانک مشتعل ہوگیا اور اس نے ٹریفک پولیس کانسٹیبل کو زوردار طمانچہ رسید کردیا جس کے فوری بعد دونوں ایک دوسرے کے گریبان کو پکڑ کر آپس میں متصادم ہوگئے۔ یہ منظر جو ایک ویڈیو کی شکل میں موجود ہے، سوشیل میڈیا پر وائرل ہوچکا ہے اور شہری مختلف انداز میں اس پر تبصرہ کررہے ہیں۔ بتایا جاتا ہیکہ کانسٹیبل کی شکایت پر جوبلی ہلز پولیس نے مقدمہ درج کرلیا ہے اور مصروف تحقیقات ہے۔ ذرائع کے مطابق کل رات جوبلی ہلز چیک پوسٹ پر نشہ کی حالت میں گاڑی چلانے والوں کے خلاف کارروائی کی مہم جاری تھی کہ اس دوران پولیس نے انکت نامی شہری کی گاڑی کو روک لیا اور اس کا ٹسٹ کیا اور یہ شخص مقدار سے کہیں زیادہ شراب استعمال کرچکا تھا۔ ٹریفک پولیس عملہ نے جب اس سے دریافت کرنا شروع کیا تو بازو بیٹھے ایک اور شخص نے ٹریفک پولیس عملہ سے بحث و تکرار شروع کردی اور دیکھتے ہی دیکھتے ٹریفک پولیس کانسٹیبل کو زوردار طمانچہ رسید کردیا اور گربیان پکڑ کر ڈھکیل دیا۔ اپنے ساتھی کانسٹیبل پر ہورہے حملہ کو دیکھتے ہوئے دیگر ساتھی کانسٹیبل نے اس شخص کو مارپیٹ کا نشانہ بنایا۔ جوبلی ہلز پولیس کے مطابق ٹریفک کانسٹیبل جتیندر کی شکایت پر پولیس نے انکت کے خلاف مقدمہ درج کرلیا ہے اور مصروف تحقیقات ہے۔

TOPPOPULARRECENT