Wednesday , September 19 2018
Home / شہر کی خبریں / ٹرین ۔ بس حادثہ میں زخمی طلباکے بہتر علاج کی ہدایت

ٹرین ۔ بس حادثہ میں زخمی طلباکے بہتر علاج کی ہدایت

معالجہ کے اخراجات حکومت برداشت کریگی ، ڈپٹی چیف منسٹر ڈاکٹر راجیا کا اعلان

معالجہ کے اخراجات حکومت برداشت کریگی ، ڈپٹی چیف منسٹر ڈاکٹر راجیا کا اعلان
حیدرآباد۔/25جولائی، ( سیاست نیوز) ڈپٹی چیف منسٹر و وزیر صحت تلنگانہ ڈاکٹر ٹی راجیا نے آج یشودھا ہاسپٹل سکندرآباد پہنچ کر میدک کے ماسائی پیٹ میں پیش آئے حادثہ کے زخمی طلبہ کی عیادت کی اور ان کی صحت کے بارے میں معلومات حاصل کی۔ ماسائی پیٹ میں کل اسکولی بس کو ٹرین کی ٹکر میں زخمی 20طلبہ ہاسپٹل میں زیر علاج ہیں اور ان میں 4کی حالت تشویشناک بتائی جاتی ہے۔ ڈپٹی چیف منسٹر ڈاکٹر راجیا نے ڈاکٹرس سے بچوں کی صحت کے بارے میں معلومات حاصل کی اور انہیں ہدایت دی کہ علاج کے سلسلہ میں کوئی بھی تساہل نہ برتا جائے۔ ڈاکٹر راجیا جو خود بھی ایک ڈاکٹر ہیں انہوں نے زخمی کمسن طلبہ کے علاج کا خود جائزہ لیا اور ڈاکٹروں کو ضروری مشورے بھی دیئے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت زخمیوں کو مفت علاج کی سہولت فراہم کرے گی اور ضرورت پڑنے پر دیگر ریاستوں کے ماہر ڈاکٹرس کی خدمات حاصل کرتے ہوئے زخمیوں کی صحت یابی کو یقینی بنایا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ 9طلبہ کی حالت مستحکم ہے اور 7طلبہ کل وینٹلیٹر کے ذریعہ علاج کیا جارہا ہے۔ ڈاکٹر راجیا نے ہاسپٹل میں موجود زخمیوں کے افراد خاندان سے بھی ملاقات کی اور انہیں ہر ممکنہ تعاون کا یقین دلایا۔ انہوں نے کہا کہ افراد خاندان جو دواخانہ میں مقیم ہیں انہیں حکومت کی جانب سے تمام سہولتیں بہم پہنچائی جائیں گی۔ زخمیوں کے افراد خاندان سے ملاقات اور کمسن طلبہ کو دیکھ کر ڈپٹی چیف منسٹر جذبات سے مغلوب ہوگئے۔ انہوں نے اس واقعہ پر گہرے دکھ کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ حکومت اس طرح کے واقعات کے تدارک کو یقینی بنانے ہر ممکن اقدامات کرے گی۔ اسی دوران وزیر آبپاشی ٹی ہریش راؤ نے بتایا کہ بس حادثہ میں زخمی طلبہ کو بہتر سے بہتر علاج کی سہولتیں فراہم کی جارہی ہیں۔ اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ماہر ڈاکٹروں کی خدمات حاصل کی گئیں اور علاج کے سلسلہ میں جس قدر بھاری خرچ ہوگا حکومت برداشت کرنے کیلئے تیار ہے۔ انہوں نے بتایا کہ مہلوک طلبہ کی نعشیں خاندانوں کو حوالے کی جارہی ہیں اور ان خاندانوں کی حکومت ہر طرح سے مدد کرے گی۔ حادثہ کی اطلاع ملتے ہی ہریش راؤ نے ساتھی وزراء مہندر ریڈی اور جگدیش ریڈی کے ہمراہ میدک پہنچ کر راحت و بچاؤ کاموں کی شخصی طور پر نگرانی کی تھی۔

TOPPOPULARRECENT