Sunday , December 17 2017
Home / کھیل کی خبریں / ٹسٹ چیمپئن شپ اورونڈے لیگ متعارف کرنے کا اعلان

ٹسٹ چیمپئن شپ اورونڈے لیگ متعارف کرنے کا اعلان

آکلینڈ۔13 اکٹوبر(سیاست ڈاٹ کام) انٹرنیشنل کرکٹ کونسل (آئی سی سی) نے ٹسٹ چمپئن شپ اور ونڈے لیگ منعقد کروانے پر اپنی رضامندی ظاہر کردی ہے ۔آئی سی سی کے عالمی کرکٹ کے چیف ایگزیکٹو آفیسر ڈیو رچرڈسن نےآج اس کی تصدیق کی۔ ٹسٹ سیریز میں، 9 ٹیمیں دو سال کی مدت میں گھریلو اور بیرونی بنیاد پر 6 سیریز کھیلیں گی۔ یہ ٹسٹ چمپئن شپ 2019 ورلڈکپ کے اختتام کے بعد شروع ہوگی جس میں اپریل 2021 تک سرفہرست دو ٹیموں کے درمیان چمپئن شپ کا فائنل کھیلا جائے گا۔اس اقدام کا مقصد بین الاقوامی کرکٹ، بالخصوص ٹسٹ میں شائقین کی دلچسپی بڑھانا ہے۔ طویل عرصے سے یہ بحث جاری ہے کہ اس جدید دور میں روایتی ٹسٹ میچ کرکٹ میں اصلاحات کیسے کی جا سکتی ہیں۔ کئی ناقدین نے ایسے خدشات بھی ظاہر کیے ہیں کہ ٹسٹشائقین میں دلچسپی کھو رہے ہیں اور اگر اس کرکٹ میں ترامیم نہ کی گئیں تو یہ کھیل اپنی موت آپ ہی مر جائے گا۔اسی بحث کے تناظر میں بین الاقوامی کرکٹ کونسل بورڈ نے اصولی طور پر اتفاق کر لیا ہے کہ عوام کی دلچسپی بڑھانے کی خاطر ٹسٹ اور محدود اوورز کے میچوں کی ایک لیگ منعقد کروائی جائے گی۔ ہنوزیہ تفصیلات جاری نہیں کی گئی ہیں کہ یہ لیگ کس طرح کام کرے گی۔ اطلاعات کے مطابق ہر ٹیم تین میچ اپنے ملک میں کھیلے گی اور تین بطور مہمان۔ یہ لیگ دو سال تک جاری رہے گی، جس کے بعد فائنل ہو گا۔اسی طرح ونڈے میچوں کی لیگ میں بین الاقوامی کرکٹ کونسل کے 12 مستقل رکن ممالک شرکت کریں گے جبکہ ایک ٹیم وہ ہو گی، جو ورلڈ کپ کی فاتح ہو گی اور مجموعی طور پر 13 ٹیمیں اس لیگ میں جلوہ گر ہوں گی۔ یہ لیگ 2020 میں شروع ہو گی۔آئی سی سی بورڈ نے اپنے اجلاس میں یہ فیصلہ بھی کیا ہے کہ ٹسٹ کرکٹ میں اصلاحات کرتے ہوئے چار روزہ میچ بھی منعقد کرایا جائے گا۔ تجرباتی بنیادوں پر یہ میچ جنوبی افریقہ اور زمبابوے کے مابین رواں برس ہی کھیلا جائے گا۔ ۔یہ امر اہم ہے کہ بالخصوص ٹسٹ کرکٹ کو زیادہ دلچسپ بنانے کی خاطر ڈے نائٹ ٹسٹ میچوں کا سلسلہ بھی شروع کیا جا چکا ہے ۔آئی سی سی نے آکلینڈ میں ہوئے بورڈ اجلاس کے دوران دو طرفہ کرکٹ کو اور متاثر کن بنانے کے ارادے سے 9 ٹیموں کے درمیان ٹسٹ لیگ اور 13 ٹیموں کے درمیان ون ڈے لیگ کی تجویز کو اپنی منظوری دے دی ہے ۔آئی سی سی صدر ششانک منوہر نے کہا کہ میں اپنے ارکان کو اس معاہدے تک پہنچنے کے لئے مبارک باد دینا چاہتا ہوں جس میں کھیل کے مفاد کو ذہن میں رکھا گیا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT