Sunday , January 21 2018
Home / ہندوستان / ٹول ٹیکس سے استثنیٰ دینے سے نتن گڈکری کا انکار

ٹول ٹیکس سے استثنیٰ دینے سے نتن گڈکری کا انکار

پونے۔ 2 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) مرکزی وزیر قومی شاہراہ نتن گڈکری نے آج قومی شاہراہ پر ٹول ٹیکس سے گاڑیوں کو استثنیٰ دینے سے انکار کرتے ہوئے کہا کہ فی الحال وہ اس طرح کا کوئی وعدہ نہیں کرسکتے۔ انہوں نے واضح طور پر کہا کہ اگر عوام کو بہتر سرویس چاہئے تو انہیں ٹول ٹیکس ادا کرنا ہی پڑے گا۔ گڈکری نے اس رائے سے اتفاق کیا کہ ٹول ٹیکس کلیکشن کو روک دیا جانا چاہئے تاہم انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ فی الوقت وہ اس حوالے سے کوئی وعدہ کرنے کے موقف میں نہیں ہیں۔ انہوںنے اس خیال کا اظہار ایک مراٹھی شاعر رام داس پٹھانے کیساتھ ایک انٹرویو کے دوران کیا۔ انہوں نے کہا کہ دنیا بھر میں ٹول ٹیکس کلیکشن عام بات ہے ، پھر بھی میں حاضرین کی اس بات سے اتفاق کرتا ہوں کہ ٹول ٹیکس کلیکشن ختم کردیا جانا چاہئے تاہم اس وقت وہ اسے نہیں روک سکتے۔ وزارت قومی شاہراہ آئندہ پانچ برسوں میں 7 لاکھ کروڑ روپئے کے مصارف سے 83,677 کیلومیٹر سڑکیں تعمیر کرنے کا منصوبہ رکھتی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اچھی سڑک کیلئے ٹول ٹیکس ادا کرنا ضروری ہے۔ پونے سے ممبئی کے فاصلے کا حوالہ دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ایک وقت تھا جب پونے سے ممبئی کا سفر مکمل کرنے میں 9 گھنٹے صرف ہوجاتے تھے، جہاں پر لوگوں کو گڑھے ، بے ہنگم ٹریفک کا سامنا کرنا پڑتا تھا ، تاہم اب وہی فاصلہ محض 2 گھنٹے میں پورا کرلیا جاتا ہے۔

TOPPOPULARRECENT