Wednesday , June 20 2018
Home / Top Stories / ٹکر مارکر بھاگ جانے کا مقدمہ

ٹکر مارکر بھاگ جانے کا مقدمہ

ممبئی۔ 16 فروری (سیاست ڈاٹ کام) بالی ووڈ اداکار سلمان خان کے پاس اُس وقت ڈرائیونگ لائسنس نہیں تھا جبکہ ان کی کار 2002ء میں حادثہ کا شکار ہوئی۔ آر ٹی او کے ایک عہدیدار نے سیشن کی عدالت کو جو ٹکر مارکر بھاگ جانے کے مقدمہ کی سماعت کررہی ہے، اس بات کی اطلاع دی۔ گواہ نے جواسسٹنٹ انسپکٹر آر ٹی او ہے، سیشن جج ڈی بلیو دیشپانڈے سے کہا کہ اداکار نے

ممبئی۔ 16 فروری (سیاست ڈاٹ کام) بالی ووڈ اداکار سلمان خان کے پاس اُس وقت ڈرائیونگ لائسنس نہیں تھا جبکہ ان کی کار 2002ء میں حادثہ کا شکار ہوئی۔ آر ٹی او کے ایک عہدیدار نے سیشن کی عدالت کو جو ٹکر مارکر بھاگ جانے کے مقدمہ کی سماعت کررہی ہے، اس بات کی اطلاع دی۔ گواہ نے جواسسٹنٹ انسپکٹر آر ٹی او ہے، سیشن جج ڈی بلیو دیشپانڈے سے کہا کہ اداکار نے 2004ء میں ڈرائیونگ لائسنس حاصل کیا تھا اور جب یہ حادثہ پیش آیا، اس کے پاس ڈرائیونگ لائسنس نہیں تھا۔ اداکار کے ڈرائیونگ لائسنس کے ریکارڈس ،گواہ نے عدالت میں پیش کئے جبکہ وکیل استغاثہ پردیپ گھارت نے اس سے جرح کی۔ ایک اور گواہ نے جو پولیس کا سب انسپکٹر ہے، عدالت سے کہا کہ وہ جے جے ہاسپٹل میں خون کے معائنے کے وقت سلمان خان کے ساتھ تھا۔ اداکار کو ڈاکٹر ششی کانت پوار کے پاس خون کے معائنے کیلئے لے جایا گیا تاکہ یہ معلوم کیا جاسکے کہ وہ شراب تو نہیں پیئے ہوئے تھا۔ دونوں گواہوں پر آج عدالت میں جرح کی گئی ۔ اس مقدمہ کی سماعت روزانہ ہورہی ہے۔ 20 سے زیادہ گواہوں پر پہلے ہی جرح کی جاچکی ہے۔ صرف چند ابھی باقی ہیں۔ 28 ستمبر 2002ء کو اداکار کی کار نے مضافاتی علاقہ باندرہ میں ایک بیکری کو ٹکر مار دی تھی جس سے ایک شخص ہلاک اور دیگر چار زخمی ہوگئے تھے جو بیکری کے باہر سو رہے تھے۔

TOPPOPULARRECENT