Saturday , May 26 2018
Home / شہر کی خبریں / ٹکنالوجی کے دور میں اساتذہ تدریسی جذبہ سے قاصر

ٹکنالوجی کے دور میں اساتذہ تدریسی جذبہ سے قاصر

اساتذہ کو ایوارڈ تقریب، مدھوسدن چاری کا خطاب
حیدرآباد۔/17ڈسمبر، ( سیاست نیوز) اساتذہ اپنی قدیم روایات کو برقرار رکھیں اس لئے کہ سائنس و ٹکنالوجی کی اتنی ترقی کے نہ ہونے کے باوجود اساتذہ اتنی محنت و مشقت کیا کرتے اور اپنا تجربہ و قابلیت شاگردوں پر انڈیل دیتے۔ مگر یہ جذبہ آج اساتذہ میں بہت کم دکھائی دے رہا ہے۔ یہ بات ایس مدھوسدن چاری اسپیکر تلنگانہ اسمبلی نے مدینہ ایجوکیشنل سنٹر میں روٹری کلب آف چارمینار اور کانفیڈریشن میناریٹیز انسٹی ٹیوشن کی جانب سے منعقدہ نیشن بلڈرس ایوارڈس تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ صدارت جناب خلیل الرحمن نے کی۔ واضح رہے کہ روٹری کلب آف چارمینار کی جانب سے جناب ایس مدھوسدن چاری کے ہاتھوں اساتذہ کو ’’ نیشن بلڈرس ایوارڈس ‘‘ دیئے گئے۔ مولانا یوسف زاہد مظاہری صدر نشین تلنگانہ کھادی اینڈ ولیج بورڈ نے کہا کہ اساتذہ جو خود بڑی محنت کیا کرتے اور بعد میں اپنے شاگردوں کو اپنی محنت کا صلہ دے دیا کرتے ہیں۔ اگر وہ محنت نہ کرتے اور جس لگن کے ساتھ طلباء پر اپنی توجہ نہ دیتے تو انسان آج انسان نما جانور دکھائی دیتا۔انہوں نے کہا کہ اساتذہ کو ایک رول ماڈل کی حیثیت سے اپنا کردار ادا کرنا پڑتا ہے۔ جناب وقار خالد نے کہا کہ اگر طلباء اساتذہ کی عزت و تکریم کریں گے تو انہیں مالک دو جہاں کی خوشنودی حاصل ہوگی اور ان کے علم میں اضافہ بھی ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ اساتذہ اگر والدین کی طرح طلباء پر اپنے نقوش چھوڑیں گے تو ان میں تبدیلی کا جذبہ پیدا ہونا ضروری ہوجائے گا۔ جناب سلطان احمد قادری اور جناب محمد طاہر نے بھی مخاطب کیا۔

TOPPOPULARRECENT