Thursday , December 13 2018

ٹیلی کمیونیکیشن گھوٹالہ: تائیوان کے 13شہریوں کو جیل

بیجنگ،21دسمبر (سیاست ڈاٹ کام) چین کی ایک عدالت نے ٹیلی کمیونیکیشن گھوٹالے میں 33افراد کو آج جیل کی سزا سنائی جن میں تائیوان کے 13شہری بھی ہیں۔انہیں کینیا سے معطل کیاگیا ہے ۔گزشتہ دو برسوں کے دوران کینیا،اسپین ،ویتنام اور کمبوڈیا کے سیکڑوں لوگوں کو اس گھوٹالے سے منسلک معاملے میں تائیوان سے چین لایا گیا ہے ۔حالانکہ تائیوان نے یہ کہہ کر اس کی مخالفت کی ہے کہ چین اس کے شہریوں کا اغوا کررہا ہے ۔لیکن چین نے اس کا بچاؤ یہ کہہ کر کیا ہے کہ یہ جرم چین کے لوگوں کے خلاف کئے گئے ہیں اور تائیوان بھی چین کا ہی ایک حصہ ہے تو ایسے میں ظاہر ہے کہ غیر ملکی شہریوں کو تائیوان کے بجائے چین میں ہی سزا دی جائے گی۔بیجنگ کی عدالت نے ایک مختصر بیان جاری کرکے کہاہے کہ ان 33لوگوں کو جیل کی سزا سنائی گئی ہے اور یہ سزا دو سال سے لے کر 15سال تک کی ہے ۔اس کے علاوہ ان پر کافی جرمانے بھی عائد کئے گئے ہیں لیکن تائیوان کے شہریوں کودی گئی سزا کے بارے میں کوئی اطلاع نہیں دی گئی ہے ۔چین میں ہوئے اس ٹیلی کمیونیکیشن گھوٹالے میں چین نے کافی نقصان ہونے کی بات کہی ہے جس میں ان لوگوں نے افسر بن کر یا دیگر تنظیموں کے نمائندے کے طورپر بزرگوں ،طلبہ اور بے روزگار لوگوں کے ساتھ دھوکہ دہی کی تھی۔

TOPPOPULARRECENT