Friday , October 19 2018
Home / کھیل کی خبریں / ٹیم انڈیا کے عظیم اسکور (536)کے سامنے سری لنکن ٹیم بے بس

ٹیم انڈیا کے عظیم اسکور (536)کے سامنے سری لنکن ٹیم بے بس

سری لنکا نے آلودگی کے بہانے ویراٹ کو ٹریپل سنچری سے روکا، کھیل ختم ہونے تک مہمان ٹیم کا اسکور 131/3
نئی دہلی۔ 3 دسمبر(سیاست ڈاٹ کام) ہندوستان اور سری لنکا کے درمیان یہاں فیروز شاہ کوٹلہ میدان میں دوسرے دن اتوار کو جہاں ہندستانی کپتان وراٹ کوہلی (243) کی ریکارڈ ساز چھٹی ڈبل سنچری دیکھنے کو ملی تو وہیں سری لنکائی کھلاڑیوں نے دوسرے سیشن میں بار بار دہلی کی آلودگی کو لے کر اعتراض اٹھاتے ہوئے اچانک تنازعہ پیدا کر دیا۔ہندستانی کپتان وراٹ کوہلی نے دوسرے سیشن میں سری لنکائی کھلاڑیوں کی آلودگی کی وجہ سے بار بار کھیل روکے جانے سے تنگ آکر ہندستان کی پہلی اننگز سات وکٹ پر 536 رن پر ڈکلئیرکر دی ۔ سری لنکا نے اس کے جواب میں دوسرے دن کا کھیل ختم ہونے تک 44.3 اوور میں تین وکٹ پر 131 رنز بنا لئے ہیں اور وہ اب ہندستان کے اسکور سے 405 رنز پیچھے ہے ۔آلودگی کی بات اٹھا کر دوسرے سیشن میں تین چار بار کھیل رکوانے والی سری لنکا کی ٹیم کو اس کی اننگز کی پہلی ہی گیند پر جھٹکا لگا جب دمتھ کرونارتنے فاسٹ بولر محمد سمیع کی گیند پر وکٹ کے پیچھے لپکے گئے ۔اننگز کے چھٹے اوور میں ایشانت شرما نے دھننجے ڈی سلوا (1) کو ایل بی ڈبلیو کر دیا۔سری لنکا کا دوسرا وکٹ 14 کے اسکور گر گیا۔دلروان پریرا (42) اور اینجلو میتھیوز (ناٹ آؤٹ 57) نے تیسرے وکٹ کے لئے 61 رن کی ساجھے داری کی۔پریرا کو لیفٹ آرم اسپنر رویندر جڈیجہ نے ایل بی ڈبلیو کیا۔میتھیوز نے اس کے بعد کپتان دنیش چنڈیمل کے ساتھ باقی کھیل محفوظ نکال لیا۔میتھیوز نے آف اسپنر روی چندرن اشون پر مسلسل دو چھکے مار کر اپنی نصف سنچری مکمل کی۔وراٹ اور شکھر دھون نے دو آسان کیچ ڈراپ کئے ورنہ سری لنکا کی حالت اور زیادہ خراب ہو سکتی تھی۔اسٹمپس کے وقت میتھیوز آٹھ چوکوں اور دو چھکوں کی مدد سے 57 اور چنڈیمل تین چوکوں کے سہارے 25 رن بنا کر کریز پر تھے ۔ دونوں نے چوتھے وکٹ کی ناقابل شکست شراکت میں 56 رن جوڑ دیئے ۔میچ کا دوسرا دن بڑا ہی دلچسپ رہا۔پہلے اور آخری سیشن میں آلودگی کی کوئی شکایت نہیں ہوئی لیکن دوسرے سیشن میں سات سری لنکائی کھلاڑی ماسک پہن کر میدان میں اترے اور انہوں نے تین چار بار آلودگی کو لے کر اپنی پریشانی بیان کر کے میچ رکوایا۔اسی چکر میں ہندستانی کپتان وراٹ کی یکسوئی متاثر ہوئی اور وہ 243 رنز بنا کر ایل بی ڈبلیو ہو گئے ۔ورنہ وہ جس طرح سے کھیل رہے تھے اس سے اپنی ٹرپل سنچری مکمل کر سکتے تھے ۔وراٹ نے نہ صرف اپنا ذاتی بہترین اسکور بنایا بلکہ کوٹلہ میدان پر 62 سال پرانا نیوزی لینڈ کے برٹ اسٹکلف کا ناٹ آؤٹ 230 رنز کا ریکارڈ بھی توڑ دیا۔وراٹ نے ہندوستانی اننگز کا اعلان کرنے کے بعد چائے کے وقفہ تک کے کھیل اور دن کے باقی کھیل میں یہ ثابت کرنے کی کوشش کی کہ آلودگی اتنی بڑا مسئلہ نہیں ہے جتنا کہ سری لنکائی کھلاڑیوں نے اسے بنا دیا۔جو سری لنکائی کھلاڑی فیلڈنگ کرتے وقت بار بار ہانپتے نظر آ رہے تھے ان ہی کھلاڑیوں کو بلے بازی کے وقت کوئی پریشانی نہیں ہوئی۔وراٹ کی ٹرپل سنچری کے لئے موجود ناظرین نے ان کے آؤٹ ہونے کے بعد سری لنکائی کھلاڑیوں کی کافی ھوٹنگ بھی کی۔کپتان وراٹ کوہلی (243) کے عالمی ریکارڈ ڈبل سنچری کی بدولت ہندستان لنچ تک 500 کا اسکور بنا چکا تھا۔لنچ کے بعد جب کھیل شروع ہوا تو تقریبا ایک گھنٹے بعد ہی سری لنکائی کھلاڑیوں نے آلودگی کو لے کر بار بار شکایت کرنا شروع کی جس سے کھیل رکا رہا۔

TOPPOPULARRECENT