Saturday , May 26 2018
Home / کھیل کی خبریں / ٹیم میں منتخب نہ کرنے پر نوجوان کرکٹر کی خودکشی

ٹیم میں منتخب نہ کرنے پر نوجوان کرکٹر کی خودکشی

کراچی ۔20 فبروری (سیاست ڈاٹ کام )کراچی کی انڈر 19 کرکٹ ٹیم کے کھلاڑی اور سابق کرکٹر عامر حنیف کے نوجوان بیٹے محمد زریاب نے خود کشی کرلی۔ رپورٹ کے مطابق کراچی سے تعلق رکھنے والے کرکٹر محمد زریاب نے دلبرداشتہ ہو کر گلے میں پھندا لگا کر خود کشی کی۔اس بارے میں مرحوم کرکٹر کے والد عامر حنیف نے الزام لگایا کہ ان کے بیٹے محمد زریاب کو خودکشی پر مجبور کیا گیا کیونکہ وہ کوچز کے رویے سے دلبرداشتہ ہوگیا تھا۔عامر حنیف نے اپیل کی کہ کوچز کے رویے سے دلبرادشتہ ہوکر میرا بیٹا چلا گیا لیکن دوسروں کے بیٹوں کو بچایا جائے۔انہوں نے الزام لگایا کہ کوچز کے حوالے سے کوئی معاملہ تھا جس کے باعث محمد زریاب دباؤ میں تھا اور وہ 2 سے 3 مرتبہ ٹرائل دینے کے باوجود منتخب نہیں ہو پارہا تھا۔محمد زریاب کو لگ رہا تھا کہ کوچز کی جانب سے میرٹ پر انتخاب نہیں کیا جارہا، جس کے باعث وہ یہ اقدام اٹھانے پر مجبور ہوا۔واضح رہے کہ محمد زریاب فرسٹ ایئر کا طالب علم تھا اور وہ کراچی کی انڈر 19 ٹیم کی نمائندگی کے علاوہ کچھ عرصے قبل ٹورنمنٹ جیتنے والی ٹیم کا بھی حصہ تھے۔محمد زریاب 11 دو روزہ میچ، 8 تین روزہ میچ اور 2 ایک روزہ میچ کھیل چکا تھا، جس میں اس کا ریکارڈ کافی اچھا تھا۔نوجوان کرکٹر نے 3 روزہ میچز کی 11 اننگز میں 297 رنز اسکور کیے جبکہ 2 روزہ میچز کی 17 اننگز میں 483 رنز بنائے اس کے علاوہ ایک ونڈے کی 2 اننگز میں 22 رنز اسکور کیے تھے۔دوسری جانب پولیس نے اس حوالے سے کہا کہ گزشتہ روز ماڈل کالونی سے گھر سے ملی لاش کی شناخت محمد زریاب کے نام سے ہوئی اور وہ سابق کرکٹر عامر حنیف کا بیٹا ہے اور موت کی اصل وجہ پوسٹ مارٹم کے بعد ہی معلوم ہوسکے گی لیکن ابھی تک اس حوالے سے محمد زریاب کے اہل خانہ کی جانب سے کوئی رابطہ نہیں کیا گیا۔

TOPPOPULARRECENT