Thursday , June 21 2018
Home / شہر کی خبریں / ٹیچرس کی 24000 مخلوعہ جائدادوں پر تقررات کا مطالبہ

ٹیچرس کی 24000 مخلوعہ جائدادوں پر تقررات کا مطالبہ

سرکاری اسکولوں کے طلبہ کی تعلیم سے عدم دلچسپی افسوسناک: اتم کمار ریڈی

سرکاری اسکولوں کے طلبہ کی تعلیم سے عدم دلچسپی افسوسناک: اتم کمار ریڈی
حیدرآباد /17 مارچ (سیاست نیوز) صدر تلنگانہ پردیش کانگریس اتم کمار ریڈی نے ڈی ایس سی کا اہتمام کرتے ہوئے 24,000 ٹیچرس کی مخلوعہ جائدادوں پر تقررات کا حکومت سے مطالبہ کیا۔ آج گاندھی بھون میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے انھوں نے کہا کہ مخلوعہ جائدادوں پر تقررات اور طلبہ کو تعلیمی سہولت فراہم کرنے کی بجائے حکومت زمرہ بندی پر توجہ دے کر اسکولوں کو بند کرنے یا ایک دوسرے میں ضم کرنے کی کوشش کر رہی ہے، جس کی کانگریس پارٹی سخت مذمت کرتی ہے۔ انھوں نے کہا کہ تعلیمی نظام میں کارپوریٹ ادارے بہت بڑا چیلنج بنے ہوئے ہیں، جب کہ مسابقت کے لئے کارپوریٹ تعلیمی اداروں سے آگے بڑھنے کے لئے سرکاری اسکولوں میں بنیادی سہولتوں کا ہونا ضروری ہے۔ انھوں نے کہا کہ تلنگانہ کی مخلوعہ جائدادوں پر تقررات کی بجائے حکومت ٹال مٹول کی پالیسی اپناکر غریب بچوں کی زندگیوں کے ساتھ کھلواڑ کر رہی ہے۔ انھوں نے کہا کہ تلنگانہ میں 1.7 لاکھ سرکاری جائدادیں مخلوعہ ہیں، جن پر تقررات کی بجائے حکومت کمل ناتھ کمیٹی کی سفارشات کا بہانہ بناکر تقررات کو نظرانداز کر رہی ہے۔ انھوں نے کہا کہ حکمراں جماعت نے علحدہ ریاست کی تشکیل کے بعد لاکھوں نوجوانوں کو روزگار فراہم کرنے اور اپنے انتخابی منشور میں ہر گھر کے ایک فرد کو سرکاری ملازمت دینے کا وعدہ کیا تھا، مگر حصول اقتدار کے 9 ماہ گزرنے کے بعد بھی کسی کو سرکاری ملازمت نہیں دی گئی۔ یہاں تک کہ تلنگانہ کے لئے جان قربان کرنے والے افراد کے ارکان خاندان کو بھی نظرانداز کردیا گیا۔ انھوں نے کہا کہ کانگریس پارٹی خاموش نہیں بیٹھے گھی، بلکہ ان تمام مسائل کو اسمبلی میں موضوع بحث بنائے گی۔

TOPPOPULARRECENT