Monday , June 25 2018
Home / شہر کی خبریں / ٹی آر ایس اپنے انتخابی وعدوں کی تکمیل کے لیے کوشاں

ٹی آر ایس اپنے انتخابی وعدوں کی تکمیل کے لیے کوشاں

حیدرآباد کی عالمی خطوط پر ترقی کے لیے اقدامات ، ڈپٹی چیف منسٹر ڈاکٹر راجیا کا بیان

حیدرآباد کی عالمی خطوط پر ترقی کے لیے اقدامات ، ڈپٹی چیف منسٹر ڈاکٹر راجیا کا بیان
حیدرآباد۔/12اگسٹ، ( سیاست نیوز) ڈپٹی چیف منسٹر ڈاکٹر ٹی راجیا نے کہا کہ ٹی آر ایس کے انتخابی منشور میں عوام سے کئے گئے تمام وعدوں کو بہر صورت مکمل کیا جائے گا۔ تلنگانہ بھون میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر راجیا نے کہا کہ حکومت حیدرآباد کو بین الاقوامی سطح پر ایک ترقی یافتہ اور ماڈل شہر کے طور پر ترقی دینے کا عہد کرچکی ہے اور اس سلسلہ میں مختلف اقدامات کئے جارہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ٹی آر ایس کو برسراقتدار آئے دو ماہ کا عرصہ ہوچکا ہے اور اس مدت کے دوران کئی اہم انتخابی وعدوں کی تکمیل کی سمت پیشرفت کی گئی۔ انہوں نے کہا کہ کسانوں کے قرضوں کی معافی اور نوجوانوں کیلئے روزگار کے مواقع کی فراہمی حکومت کی ترجیحات ہیں اور حیدرآباد میں بین الاقوامی معیار کے اداروں کے قیام کے ذریعہ نوجوانوں کیلئے روزگار کے مواقع فراہم کئے جائیں گے۔ انہوں نے بتایا کہ تلنگانہ میں خشک سالی، آفات سماوی اور دیگر معاشی مسائل کے سبب کسانوں کی خودکشی کے واقعات پر کابینہ کے اجلاس میں غور کیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ 40لاکھ کسان خاندانوں کو قرض کی معافی اسکیم سے فائدہ پہنچانے کیلئے حکومت اقدامات کررہی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ زرعی قرضوں کی معافی کے سلسلہ میں ریزرو بینک آف انڈیا سے بات چیت کیلئے حکومت کے عہدیدار ممبئی روانہ ہوئے ہیں۔ انہوں نے کنٹراکٹ ملازمین کو باقاعدہ بنانے کے مسئلہ پر احتجاج کرنے والے طلبہ کو مشورہ دیا کہ وہ تحمل سے کام لیں اور غیر ضروری اُلجھن کا شکار نہ ہوں۔ انہوں نے بتایا کہ حکومت مختلف شعبوں میں روزگار کے مواقع پیدا کردے گی۔ تلنگانہ پبلک سرویس کمیشن کے قیام کے بعد تمام محکمہ جات کی مخلوعہ جائیدادوں پر تقررات کا عمل شروع کیا جائے گا۔ انہوں نے بتایا کہ 22ہزار سے زائد کنٹراکٹ ملازمین کی خدمات باقاعدہ بنائی جائیں گی ان میں 12ہزار سے زائد ملازمین محکمہ صحت میں موجود ہیں۔ ڈاکٹر راجیا نے کہاکہ حکومت اپنے وعدہ کے مطابق تلنگانہ ملازمین کو خصوصی انکریمنٹ دینے کا فیصلہ کرچکی ہے۔ ڈپٹی چیف منسٹر کے مطابق حکومت تلنگانہ جدوجہد کے دوران اپنی جانوں کی قربانی دینے والے طلباء کے خاندانوں کو فی کس 10لاکھ روپئے مالی امداد اور 3ایکر زرعی اراضی فراہم کی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ زرعی اراضی کی ترقی کیلئے حکومت مختلف مراعات بھی فراہم کرنے پر غور کررہی ہے۔ شہدائے تلنگانہ کے خاندانوں میں سرکاری ملازمت کے اہل کسی ایک فرد کو ملازمت دی جائے گی۔ ڈاکٹر راجیا نے کہا کہ حکومت وعدہ کے مطابق تلنگانہ تحریک میں حصہ لینے والے افراد کے خلاف مقدمات سے دستبرداری اختیار کرے گی اور اس سلسلہ میں جلد ہی اعلان کیا جائے گا۔ ڈاکٹر راجیا نے عوام سے اپیل کی کہ وہ 19اگسٹ کو ریاست بھر میں ہونے والے جامع گھر گھر سروے کی تکمیل کے سلسلہ میں حکام سے تعاون کریں۔ انہوں نے کہاکہ عوام کو چاہیئے کہ وہ اس سروے کے دوران مکمل اور صحیح معلومات عہدیداروں کو فراہم کریں۔ ڈپٹی چیف منسٹر نے کہا کہ مستقبل میں مختلف فلاحی اسکیمات سے استفادہ کے سلسلہ میں یہ سروے اہمیت کا حامل ہے۔ اس سروے کا مقصد یہ جاننے کی کوشش ہے کہ عوام کی بھلائی اور ترقی کیلئے مزید کیا اقدامات ضروری ہیں۔ انہوں نے کہا کہ 19اگسٹ کو تمام سرکاری، خانگی اداروں کو تعطیل کا اعلان کیا گیاہے۔ ڈاکٹر راجیا نے کہا کہ بیواؤں، معذورین اور معمرین کو دسہرہ کے موقع پر وظائف کی تقسیم کا آغاز ہوگا۔ حکومت دلت نوجوانوں کی شادی کیلئے کلیان لکشمی اسکیم کے ذریعہ فی کس 50ہزار روپئے مالی امداد فراہم کرے گی۔ ڈاکٹر راجیا نے بتایا کہ دسہرہ کے موقع پر حیدرآباد میں بیلٹ شاپس کا احیاء عمل میں آئے گا۔ تلنگانہ کو سرسبز وشاداب بنانے کیلئے حکومت نے 230کروڑ پودے لگانے کا فیصلہ کیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT