Saturday , April 21 2018
Home / شہر کی خبریں / ٹی آر ایس حکومت میں گرام پنچایت نظرانداز : : کشن ریڈی

ٹی آر ایس حکومت میں گرام پنچایت نظرانداز : : کشن ریڈی

حیدرآباد۔ 14 جنوری (سیاست نیوز) تلنگانہ بی جے پی نے ریاست میں برسراقتدار ٹی آر ایس زیرقیادت حکومت کو سخت تنقید کا نشانہ بنایا اور الزام عائد کیا کہ ٹی آر ایس کی زیرقیادت حکومت تشکیل پانے کے بعد سے اب تک ریاست میں کسی گرام پنچایت کو ترقی دینے کیلئے ایک روپیہ بھی خرچ نہیں کیا گیا۔ اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے قائد بی جے پی مقننہ پارٹی جی کشن ریڈی نے یہ بات کہی اور بتایا کہ 14 ویں فینانس کمیشن کے ذریعہ مرکزی حکومت نے ہر ایک گرام پنچایت کیلئے 80 لاکھ روپئے مختص کئے لیکن ریاستی حکومت نے ان رقومات کو کسی اور اغراض و مقاصد کیلئے استعمال کرکے گرام پنچایتوں کی ترقی کو نظرانداز کردیا۔ انہوں نے کہا کہ چیف منسٹر تلنگانہ کے چندر شیکھر راؤ نے انتخابات کے موقع پر ریاست کے عوام سے کئی ایک وعدے کئے بالخصوص تانڈوں کو گرام پنچایت میں تبدیل کرنے کا وعدہ بھی کیا تھا، لیکن اقتدار حاصل ہونے کے ساتھ ساتھ کے سی آر نے اپنے کئے ہوئے تمام وعدوں کو فراموش کردیا بلکہ اب پنچایت قوانین میں ترمیمات کرنے کی کوشش کررہے ہیں۔ انہوں نے چیف منسٹر کو ہدف ملامت بناتے ہوئے کہا کہ وہ اپنی متعدد بے قاعدگیوں کی پردشہ پوشی کرنے کیلئے ان کے خلاف آواز اٹھانے والوں کے خلاف کارروائی کرنے کی کوششوں کے ذریعہ انہیں خوف زدہ کررہے ہیں۔ کشن ریڈی نے کہا کہ تلنگانہ حکومت نے گرام پنچایتوں کو ترقی دینے کے بجائے گرام پنچایتوں کی کارکردگی کو مکمل ٹھپ کردیا، لہذا گرام پنچایتوں کی ترقی کیلئے کئے گئے اقدامات سے ریاستی عوام کو واقف کروانے کا چیف منسٹر سے مطالبہ کیا۔

TOPPOPULARRECENT