Wednesday , November 22 2017
Home / شہر کی خبریں / ٹی آر ایس حکومت کے انقلابی اقدامات سے تلنگانہ میں برقی بحران پر قابو

ٹی آر ایس حکومت کے انقلابی اقدامات سے تلنگانہ میں برقی بحران پر قابو

تشکیل تلنگانہ سے قبل اپوزیشن کے برقی پر اندیشے غلط ثابت ، وزیر برقی جگدیش ریڈی
حیدرآباد۔13 فبروری (سیاست نیوز) وزیر برقی جگدیش ریڈی نے کہا کہ اپوزیشن جماعتوں نے تلنگانہ کی تشکیل سے قبل برقی کی سربراہی کے سلسلہ میں مختلف اندیشوں کا اظہار کیا تھا لیکن تلنگانہ ریاست کی تشکیل کے ساتھ ہی کے سی آر کی زیر قیادت ٹی آر ایس حکومت نے انقلابی اقدامات کے ذریعہ برقی بحران پر قابو پالیا ہے۔ وزیر برقی نے کہا کہ متحدہ آندھراپردیش میں برقی کی سربراہی کی صورتحال انتہائی ابتر تھی۔ خاص طور پر زرعی شعبہ برقی کی عدم سربراہی کے سبب مختلف مسائل کا شکار تھا۔ ٹی آر ایس نے زرعی شعبہ کے علاوہ گھریلو اور صنعتی شعبہ کو بہتر برقی کی سربراہی کا جو وعدہ کیا تھا، اس پر کامیابی کے ساتھ عمل آوری کی جارہی ہے۔ اپوزیشن کو یقین نہیں تھا کہ حکومت برقی بحران پر قابو پالے گی۔ انہوں نے کہا کہ برقی کی سربراہی اور تیاری کے معاملہ میں تلنگانہ ریاست اندرون دو سال نہ صرف خود مکتفی ہوجائے گی بلکہ وہ فاضل برقی دیگر ریاستوں کو سربراہ کرنے کے موقف میں ہوگی ۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کی کامیاب پالیسی کے نتیجہ میں تلنگانہ میں سرمایہ کاری میں اضافہ ہوا ہے۔ صنعتوں کو برقی اور دیگر انفراسٹرکچر کی سہولتوں کی فراہمی میں تلنگانہ دیگر ریاستوں سے آگے ہے۔ انہوں نے کہا کہ شدید گرما کے باوجود تلنگانہ کے شہری علاقوں میں برقی کٹوتی نہیں کی گئی جو اس بات کا ثبوت ہے کہ حکومت نے اپنے وعدے پر عمل کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ حیدرآباد میں موسم گرما میں برقی کٹوتی نہیں کی گئی اور عوام میں حکومت کی کارکردگی کو پیش نظر رکھتے ہوئے گریٹر انتخابات میں ٹی آر ایس کو 100 نشستوں پر کامیابی عطا کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت زرعی شعبہ کو دو اقساط میں برقی سربراہ کرنے کے بجائے بیک وقت مسلسل 9 گھنٹے سربراہ کرنے کی تیاری کررہی ہے تاکہ فصلوں کو نقصان نہ ہو۔ انہوں نے کہا کہ تلنگانہ کے کسان حکومت کی کارکردگی سے مطمئن ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ ٹی آر ایس حکومت کے برسر اقتدار آنے کے بعد سے کسان خوش حال زندگی بسر کررہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ فلاحی اسکیمات کے معاملے میں تلنگانہ ریاست ملک میں سرفہرست ہے۔ 30 ہزار کروڑ سے زائد کمزور طبقات کی فلاح و بہبود پر خرچ کئے جارہے ہیں۔ جگدیش ریڈی نے کہا کہ تلنگانہ میں 80 فیصد افراد کا تعلق کمزور اور پسماندہ طبقات سے ہے اور حکومت ان کی بھلائی کے لیے ہر ممکن اقدامات کررہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ چیف منسٹر کے چندر شیکھر رائو تمام طبقات کی یکساں ترقی کے ذریعہ سنہرے تلنگانہ کی تشکیل کی سمت پیش رفت کررہے ہیں اور وہ ہر شہری کے چہرے پر خوشی دیکھنا چاہتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ صرف دو سال کے عرصے میں انتخابی وعدوں کی تکمیل کے سی آر کا کارنامہ ہے۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT