Wednesday , June 20 2018
Home / شہر کی خبریں / ٹی آر ایس حکومت کے غیر ذمہ دارانہ بیان سے کسانوں کی خودکشی

ٹی آر ایس حکومت کے غیر ذمہ دارانہ بیان سے کسانوں کی خودکشی

کے سی آر پر انتخابی منشور سے انحراف کا الزام: صدر تلنگانہ پی سی سی پنالہ لکشمیا

کے سی آر پر انتخابی منشور سے انحراف کا الزام: صدر تلنگانہ پی سی سی پنالہ لکشمیا
حیدرآباد /6 جون (سیاست نیوز) صدر تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی پنالہ لکشمیا نے کہا کہ ٹی آر ایس حکومت کے غیر ذمہ دارانہ بیان پر 4 کسانوں نے خود کشی کرلی۔ انھوں نے کہا کہ ٹی آر ایس 2012ء سے کسانوں کے قرضہ جات معاف کرنے کا اعلان کرتی رہی، جب کہ اس کے انتخابی منشور کے صفحہ نمبر 9 پر ایک لاکھ روپئے تک کے قرض معاف کرنے کا وعدہ کیا گیا تھا، لیکن اقتدار حاصل ہوتے ہی ٹی آر ایس اپنے وعدہ سے منحرف ہو گئی۔ انھوں نے کہا کہ جون 2013ء تا مئی 2014ء صرف ایک سال کا قرض معاف کرنے اور سونے پر حاصل کئے گئے قرض معاف نہ کرنے کے اعلان نے کسانوں میں تشویش کی لہر پیدا کردی اور اب تک علاقہ تلنگانہ کے 4 کسانوں کی خودکشی کی اطلاعات موصول ہوئی ہیں۔ انھوں نے کہا کہ ٹی آر ایس اپنے وعدہ کو پورا کرے، اس سلسلے میں کانگریس پارٹی حکومت کے ساتھ تعاون کرے گی اور اگر حکومت اپنے وعدہ سے منحرف ہوتی ہے تو کسانوں کے ساتھ مل کر حکومت کے خلاف احتجاجی مہم کا آغاز کرے گی۔ انھوں نے کہا کہ کانگریس نے کسانوں سے جو بھی وعدے کئے تھے، ان کو پورا کیا گیا، جب کہ مرکزی حکومت نے کسانوں کے قرضہ جات معاف کئے اور جو لوگ قرض ادا کرچکے تھے، انھیں فی کس پانچ ہزار روپئے ادا کئے۔ انھوں نے کہا کہ تلگودیشم حکومت نے زرعی شعبہ کو تباہ و برباد کردیا تھا، لیکن کانگریس دور حکومت میں کسانوں میں خوشحالی آئی اور خودکشی کے واقعات رُک گئے تھے۔

TOPPOPULARRECENT