Tuesday , September 25 2018
Home / شہر کی خبریں / ٹی آر ایس دیگر جماعتوں کے قائدین کی شمولیت کی منتظر

ٹی آر ایس دیگر جماعتوں کے قائدین کی شمولیت کی منتظر

فہرست کی عدم اجرائی پر پارٹی کیڈر میں بے چینی ، میدک ، نلگنڈہ ، کھمم پر خصوصی توجہ

فہرست کی عدم اجرائی پر پارٹی کیڈر میں بے چینی ، میدک ، نلگنڈہ ، کھمم پر خصوصی توجہ

حیدرآباد۔/20مارچ، ( سیاست نیوز) تلنگانہ راشٹرا سمیتی میں دیگر پارٹیوں سے قائدین کی شمولیت کے باعث اسمبلی اور لوک سبھا امیدواروں کی فہرست کو قطعیت دینے میں تاخیر ہورہی ہے۔ باوثوق ذرائع نے بتایا کہ پارٹی سربراہ چندر شیکھر راؤ بعض اضلاع میں پارٹی کا موقف مستحکم کرنے کیلئے دیگر جماعتوں کے ارکان اسمبلی کی شمولیت کے منتظر ہیں۔ اسی حکمت عملی کے تحت انہوں نے امیدواروں کی فہرست کی اجرائی کو ٹال دیا۔ دوسری طرف تلگودیشم، کانگریس اور وائی ایس آر سی پی سے نئے قائدین کی شمولیت سے ٹی آر ایس کے کیڈر میں بے چینی پائی جاتی ہے۔ پارٹی ذرائع نے بتایا کہ اسمبلی اور لوک سبھا کے بعض حلقوں میں ابھی بھی پارٹی کو مضبوط امیدواروں کی تلاش ہے اور موجودہ پارٹی انچارجس اس موقف میں نہیں کہ وہ کامیابی سے ہمکنار ہوسکیں۔ چونکہ تلنگانہ میں پارٹی کو اصل مقابلہ کانگریس سے ہے لہذا اسے کانگریس کے ارکان اسمبلی اور سینئر قائدین کی شمولیت کا انتظار ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ کانگریس کے بعض ارکان اسمبلی ٹی آر ایس قیادت سے ربط میں ہیں تاہم وہ مقامی سطح پر ٹی آر ایس کارکنوں کی ناراضگی کے باعث شمولیت کے بارے میں کوئی فیصلہ کرنے سے قاصر ہیں۔ پارٹی کو امید تھی کہ کانگریس سے بڑے پیمانے پر قائدین ٹی آر ایس میں شامل ہوں گے لیکن اس کے برخلاف تلگودیشم سے قابل لحاظ تعداد میں ارکان اسمبلی نے ٹی آر ایس کا رُخ کیا۔ چونکہ تلنگانہ میں تلگودیشم کا موقف ریاست کی تقسیم کے بعد کمزور ہے

لہذا تلگودیشم ارکان اپنی نشستیں بچانے کیلئے ٹی آر ایس کا رُخ کرنے پر مجبور ہیں۔ محبوب نگر، عادل آباد اور رنگاریڈی میں تلگودیشم ارکان اسمبلی کی شمولیت سے ٹی آر ایس کا موقف کسی قدر مستحکم ہوا ہے۔ گذشتہ دنوں کھمم سے سابق رکن اسمبلی جلگم وینکٹ راؤ نے پارٹی میں شمولیت اختیار کی۔ چندر شیکھر راؤ میدک اور نلگنڈہ سے کانگریس قائدین کو پارٹی میں شامل کرنے کی کوشش کررہے ہیں۔ نلگنڈہ میں رکن پارلیمنٹ کے راجگوپال ریڈی اور ان کے بھائی کے وینکٹ ریڈی رکن اسمبلی کو راغب کرنے کی کوششیں ابھی بھی جاری ہیں۔ واضح رہے کہ حالیہ عرصہ میں تلگودیشم سے تقریباً 11ارکان اسمبلی نے ٹی آر ایس میں شمولیت اختیار کرلی جن میں کے ایس رتنم، پی مہیندر ریڈی، ہریشور ریڈی، پی نریندر ریڈی ( رنگاریڈی )، وینو گوپال چاری، جی نگیش ( عادل آباد ) وائی ایس یلا ریڈی، جئے پال یادو ( محبوب نگر) ستیہ وتی راٹھور (ورنگل ) ہنمنت شینڈے ( نظام آباد ) اور جی کملاکر ( کریم نگر) شامل ہیں۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT