Friday , September 21 2018
Home / Top Stories / ٹی آر ایس رکن قانون ساز کونسل بھوپتی ریڈی کی معطلی کا مطالبہ

ٹی آر ایس رکن قانون ساز کونسل بھوپتی ریڈی کی معطلی کا مطالبہ

نظام آباد کے ارکان پارلیمنٹ اور اسمبلی کا اجلاس، قرارداد کی منظوری
حیدرآباد۔/13ڈسمبر، ( سیاست نیوز) متحدہ ضلع نظام آباد کی نمائندگی کرنے والی حکمران ٹی آر ایس کے ارکان پارلیمنٹ ، ارکان اسمبلی، ارکان قانون ساز اسمبلی نے مخالف پارٹی سرگرمیوں میں ملوث ہونے والے ٹی آر ایس کے رکن قانون ساز کونسل بھوپتی ریڈی کو پارٹی سے معطل کرنے کی متفقہ طور پر سربراہ ٹی آر ایس و چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ سے سفارش کی ہے۔ واضح رہے کہ غیر منقسم ضلع نظام آباد میں ٹی آر ایس کے رکن اسمبلی باجی ریڈی گوردھن ریڈی اور ٹی آر ایس کے رکن قانون ساز کونسل بھوپتی ریڈی کے درمیان سرد جنگ چل رہی ہے۔ نظام آباد کی رکن پارلیمنٹ کے کویتا نے دونوں کے درمیان اختلافات کو دور کرانے کی ہر ممکن کوشش کی ہے۔ گزشتہ ماہ ٹی آر ایس لیجسلیچر پارٹی کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے چیف منسٹر نے بھوپتی ریڈی کا نام لئے بغیر انہیں سخت انتباہ دیا تھا باوجود وہ باجی ریڈی گوردھن ریڈی کے حلقہ میں غیر ضروری مداخلت کررہے ہیں جس کا سخت نوٹ لینے کے بعد آج حیدرآباد میں ریاستی وزیر زراعت پوچارام سرینواس ریڈی کی صدارت میں ضلع نظام آباد کے ٹی آر ایس منتخب نمائندوں کا اجلاس منعقد ہوا جس میں ارکان پارلیمنٹ کے کویتا، بی بی پاٹل ارکان اسمبلی، شکیل عامر، جیون ریڈی، ہنمنت شنڈے، باجی ریڈی گوردھن ریڈی، پرشانت ریڈی، جی گوردھن ، گنیش گپتا رکن قانون ساز کونسل وی جی گوڑ، ٹی آر ایس کی جنرل سکریٹری و ضلع نظام آباد کی انچارج ٹی اوما نے اجلاس میں شرکت کی۔ اجلاس میں بھوپتی ریڈی کی مخالف پارٹی سرگرمیوں کا جائزہ لیا گیا جس سے پارٹی پرپڑنے والے منفی اثرات کو دور کرنے پارٹی میں ڈسپلین کو یقینی بنانے کیلئے بھوپتی ریڈی کو پارٹی معطل کرنے کیلئے اجلاس میں متفقہ طور پر قرارداد منظور کرتے ہوئے انہیں معطل کرنے کی چیف منسٹر سے سفارش کی گئی۔

TOPPOPULARRECENT