Friday , July 20 2018
Home / شہر کی خبریں / ٹی آر ایس مجرمانہ سرگرمیوں کی سخت مخالف

ٹی آر ایس مجرمانہ سرگرمیوں کی سخت مخالف

نلگنڈہ میں کانگریس قائد سرینواس کے قتل کا الزام بے بنیاد ، رکن کونسل پربھاکر کی پریس کانفرنس

حیدرآباد۔/23جنوری، ( سیاست نیوز) تلنگانہ راشٹرا سمیتی نے نلگنڈہ میونسپل چیرپرسن کے شوہر اور کانگریسی قائد بی سرینواس کے قتل میں ٹی آر ایس کے ملوث ہونے سے متعلق الزامات کو مسترد کردیا اور کہا کہ سرینواس کا قتل کانگریس سے تعلق رکھنے والوں کی کارستانی ہے۔ ٹی آر ایس رکن قانون ساز کونسل کے پربھاکر نے میڈیا کے نمائندوں سے بات کرتے ہوئے کہا کہ کانگریس قائدین سرینواس کے قتل کے سلسلہ میں ٹی آر ایس پر بے بنیاد الزامات عائدکررہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پارٹی سرینواس کے قتل کی عدالتی تحقیقات اور خاطیوں کو سخت سزا دینے کا مطالبہ کرتی ہے تاکہ حقیقی خاطیوں کو بے نقاب کیا جاسکے۔ انہوں نے کہا کہ قتل میں ملوث ملیش، رام بابو اور شرت تینوں کا تعلق کانگریس پارٹی سے ہے۔ حکومت پر کانگریس قائدین کے الزامات بے بنیاد ہیں ۔ دراصل قتل کی سیاست پر ٹی آر ایس یقین نہیں رکھتی اور کانگریس دور حکومت میں جرائم کا پس منظر رکھنے والے افراد کی حوصلہ افزائی کی گئی تھی۔ کانگریس قائدین کی عادت بن چکی ہے کہ وہ ریاست میں کوئی واقعہ پیش آئے تو اسے حکومت اور ٹی آر ایس سے جوڑ دیتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ٹی آر ایس کے رکن اسمبلی ویریشم اور ضلع سے تعلق رکھنے والے وزیر جگدیش ریڈی پر الزام تراشی کی پارٹی مذمت کرتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ٹی آر ایس میں شمولیت کیلئے کبھی بھی مقتول سرینواس پر دباؤ نہیں بنایا گیا اور نہ ہی ٹی آر ایس کو اس طرح کی کسی کارروائی کی ضرورت ہے۔ پربھاکر نے کہا کہ مجرمانہ سرگرمیوں اور مجرمین کی سرپرستی اور حوصلہ افزائی کانگریس پارٹی کا کلچر ہے۔ انہوں نے کہا کہ رکن اسمبلی ویریشم کی فون کال ہسٹری منظر عام پر لانے سے ٹی آر ایس کو کوئی اعتراض نہیں تاہم کانگریس کے رکن اسمبلی کومٹ ریڈی وینکٹ ریڈی کے فون کال کی تفصیلات بھی عوام کے سامنے پیش کی جائیں۔ انہوں نے کہا کہ کانگریس پارٹی نچلی سطح کی سیاست پر اُتر آئی ہے اور عوامی تائید سے محرومی کے نتیجہ میں قائدین بوکھلاہٹ کا شکار ہیں۔ انہوں نے کہا کہ سیاست کو مجرمانہ سرگرمیوں سے جوڑنا کانگریس کا عمل رہا ہے جبکہ ٹی آر ایس نے کبھی بھی اس طرح کی سرگرمیوں کی حوصلہ افزائی نہیں کی۔ مقتول سرینواس اور حملہ میں ملوث افراد دونوں کانگریس رکن اسمبلی وینکٹ ریڈی کے حامی ہیں۔ انہوں نے اتم کمار ریڈی، جانا ریڈی اور ہنمنت راؤ پر نلگنڈہ پہنچ کر نعشوں پر سیاست کرنے کا الزام عائد کیا۔ انہوں نے کہا کہ نکریکل کے ٹی آر ایس رکن اسمبلی ویریشم اور ضلع کے وزیر جگدیش ریڈی پر بے بنیاد الزامات عائد کرتے ہوئے عوام میں اُلجھن پیدا کی جارہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت اور چیف منسٹر کی مقبولیت سے بوکھلاہٹ کا شکار کانگریس قائدین کے پاس الزام تراشی کے سوا کچھ نہیں ہے۔ پربھاکر نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ وہ سرینواس کے قاتلوں کے خلاف سخت کارروائی کرے۔

TOPPOPULARRECENT