Saturday , June 23 2018
Home / شہر کی خبریں / ٹی آر ایس میں شامل ہونے والے قائدین کا مستقبل تاریک

ٹی آر ایس میں شامل ہونے والے قائدین کا مستقبل تاریک

حکمراں پارٹی کے لئے بھی نقصاندہ، ریونت ریڈی کا بیان

حکمراں پارٹی کے لئے بھی نقصاندہ، ریونت ریڈی کا بیان
حیدرآباد /11 نومبر (سیاست نیوز) تلگودیشم رکن اسمبلی ریونت ریڈی نے کہا کہ دیگر جماعتوں کے ارکان اسمبلی کو ٹی آر ایس میں شامل کرکے چیف منسٹر تلنگانہ کے چندر شیکھر راؤ اپنے پیروں پر کلہاڑی مار رہے ہیں۔ آج احاطہ اسمبلی میں میڈیا سے غیر رسمی بات چیت کرتے ہوئے انھوں نے کہا کہ اسمبلی میں حکمراں ٹی آر ایس کو مکمل اکثریت حاصل ہے، وہ ہر بل اور قانون منظور کرسکتی ہے، یہاں تک کہ حکومت کے خلاف پیش کی جانے والی تحریک عدم اعتماد نوٹس کو بھی شکست ہو جائے گی، اس کے باوجود ریاست کی ترقی اور عوام کی فلاح و بہبود پر خصوصی توجہ مرکوز کرنے کی بجائے چیف منسٹر دیگر جماعتوں کے ارکان اسمبلی کو اپنی پارٹی میں شامل کرکے فخر محسوس کر رہے ہیں، جب کہ یہ اقدام ٹی آر ایس کے لئے نقصاندہ ثابت ہوگا۔ انھوں نے کہا کہ 14 سال تک تحریک اور کے سی آر کا ساتھ دینے والے ٹی آر ایس قائدین وزارت کے علاوہ بورڈ، کارپوریشن اور نامزد عہدوں کے لئے امید لگائے بیٹھے ہیں، لیکن سربراہ ٹی آر ایس دیگر جماعتوں کے ارکان اسمبلی و قائدین کو لالچ دے کر اپنی جماعت میں شامل کر رہے ہیں، جس کی وجہ سے ٹی آر ایس قائدین میں مایوسی پائی جاتی ہے اور ایک دن پارٹی گروپ بندیوں کا شکار ہو جائے گی۔ انھوں نے کہا کہ عموماً دوسال بعد کسی بھی حکومت کے خلاف عوامی تحریک شروع ہوتی ہے، مگر ٹی آر ایس حکومت اندرون 5 ماہ عوامی برہمی کا شکار ہے۔ انھوں نے کہا کہ جو ارکان اسمبلی ٹی آر ایس میں شامل ہو رہے ہیں، وہ پارٹی کے لئے نقصاندہ ثابت ہوں گے، کیونکہ ان کے خلاف مقابلہ کرنے والے ٹی آر ایس قائدین اور کیڈر پارٹی قیادت سے ناراض ہو جائے گا۔

TOPPOPULARRECENT