Friday , November 24 2017
Home / شہر کی خبریں / ٹی آر ایس پر اپوزیشن کے جھوٹے الزامات ، عوام کو پروپگنڈہ پر بھروسہ نہیں

ٹی آر ایس پر اپوزیشن کے جھوٹے الزامات ، عوام کو پروپگنڈہ پر بھروسہ نہیں

سابق کارپوریٹرس کی ٹی آر ایس میں شمولیت ، پرانے شہر سے بھی سینکڑوں عوام کی شرکت ، جگدیش ریڈی وزیر برقی کا خطاب
حیدرآباد۔/10ڈسمبر، ( سیاست نیوز) وزیر برقی جگدیش ریڈی نے دعویٰ کیا کہ تلنگانہ سے اپوزیشن جماعتوں کا عملاً صفایا ہوچکا ہے۔ ورنگل لوک سبھا حلقہ کے ضمنی چناؤ میں رائے دہندوں نے اپوزیشن کو بری طرح مسترد کرتے ہوئے حکومت کے خلاف اُن کی مہم کا جواب دیا ہے۔ جگدیش ریڈی آج تلنگانہ بھون میں کانگریس سے تعلق رکھنے والے سابق کارپوریٹرس کی ٹی آر ایس میں شمولیت کی تقریب سے خطاب کررہے تھے۔ سلطان بازار کے سابق کارپوریٹر رام چندر راجو اور سرینگر علاقہ کی سابق کارپوریٹر وجئے لکشمی کے علاوہ گوشہ محل اور یاقوت پورہ حلقوں سے مقابلہ کرنے والے قائدین نے آج ٹی آر ایس میں شمولیت اختیار کرلی۔ جگدیش ریڈی اور ریاستی وزیر کمرشیل ٹیکسیس سرینواس  یادو نے ان قائدین کا پارٹی میں استقبال کیا۔ جگدیش ریڈی نے گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپوریشن کے مجوزہ انتخابات میں ٹی آر ایس کی کامیابی اور کارپوریشن پر قبضہ کو یقینی قرار دیا اور کہا کہ حکومت نے گریٹر میں عوامی سہولیات کی فراہمی کے جو اقدامات کئے ہیں اس سے عوام خوش ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ورنگل انتخابی نتیجہ نے یہ ثابت کردیا کہ ریاست کی عوام ٹی آر ایس حکومت کے ساتھ ہے اور وہ اپوزیشن کے پروپگنڈہ پر بھروسہ کرنے والے نہیں۔ انہوں نے 60برسوں میں تلنگانہ کو نظرانداز کرنے کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ کانگریس اور تلگودیشم تلنگانہ کی پسماندگی کے ذمہ دار ہیں۔ جگدیش ریڈی نے کہا کہ حیدرآباد کو پینے کے پانی کی سربراہی کی نئی پائپ لائن اور برقی سربراہی میں اضافہ ٹی آر ایس حکومت کا کارنامہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ نظام دور حکومت میں شہر کیلئے جو ذخائر آب تعمیر کئے گئے تھے وہی آج بھی برقرار ہیں۔ آندھرائی حکمرانوں نے شہر کی آبادی میں اضافہ اور نئے ذخیرہ آب کی تعمیر پر کوئی توجہ نہیں دی تاہم ٹی آر ایس حکومت نے حیدرآباد کی آبی ضرورتوں کی تکمیل کیلئے دو ذخائر آب کی تعمیر کا فیصلہ کیا ہے۔ انہوں نے کانگریس اور تلگودیشم قائدین کی جانب سے شہر کی ترقی سے متعلق دعوؤں کو مسترد کردیا اور کہا کہ گزشتہ 60برسوں میں جو بدعنوانیاں کی گئیں اس کیلئے یہی پارٹیاں ذمہ دار ہیں لیکن آج وہ ٹی آر ایس حکومت کی اسکیمات پر تنقید کررہے ہیں۔ ان قائدین کو عوام مناسب سبق سکھائیں گے۔ وزیر برقی نے بتایا کہ حیدرآباد میں ٹی آر ایس حکومت نے گزشتہ دیڑھ سال کے دوران جن ترقیاتی اور فلاحی اسکیمات کا آغاز کیا اس کے اثرات آئندہ بلدی انتخابات میں دیکھنے کو ملیں گے ۔انہوں نے کہا کہ گریٹر حیدرآباد کے رائے دہندے ٹی آر ایس کو بھاری اکثریت سے کامیاب کریں گے۔ ریاستی وزیر سرینواس یادو نے گریٹر حیدرآباد میں ٹی آر ایس کی بھاری کامیابی کو یقینی قرار دیا اور اپوزیشن جماعتوں پر برہمی کا اظہار کیا۔ انہوں نے کہا کہ کسانوں کی خودکشی کے واقعات کو ٹی آر ایس حکومت سے منسوب کیا جارہا ہے حالانکہ سابق میں بھی خودکشی کے واقعات پیش آچکے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ حیدرآباد میں پینے کے پانی اور برقی کی مؤثر سربراہی کو یقینی بنانا کے سی آر کا کارنامہ ہے۔ حکومت ساری ریاست میں 24گھنٹے برقی کی سربراہی کو یقینی بنائے گی۔ انہوں نے کہا کہ دیگر ریاستیں حیدرآباد میں شروع کی گئی ترقیاتی اسکیمات کی تقلید کرنا چاہتی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ حیدرآباد میں غریبوں کیلئے ڈبل بیڈرومس مکانات کی تعمیر کی اسکیم کافی مقبول ہوئی ہے جس میں غریبوں کو مکانات مفت فراہم کئے جائیں گے۔ اس موقع پر صدر گریٹر حیدرآباد ٹی آر ایس ایم ہنمنت راؤ اور دیگر قائدین موجود تھے۔

TOPPOPULARRECENT