ٹی آر ایس پر بھروسہ نہ کریں ، مزید پانچ سال برباد ہوں گے

کے سی آر خاندان پر تلنگانہ کو لوٹ لینے کا الزام ، وجئے شانتی کا بیان
حیدرآباد ۔11 ۔ اکٹوبر : ( سیاست نیوز ) : فلم اسٹار سے سیاستداں بن جانے والی کانگریس کی قائد وجئے شانتی نے ٹی آر ایس پر بھروسہ کرتے ہوئے مزید قیمتی 5 سال برباد نہ کرنے کی تلنگانہ کے عوام سے اپیل کی ۔ گذشتہ ساڑھے 4 سال کے دوران کے سی آر خاندان کی جانب سے تلنگانہ کو لوٹ لینے کا الزام عائد کیا ۔ آج محبوب نگر میں کانگریس کے روڈ شو سے خطاب کرتے ہوئے ان خیالات کا اظہار کیا ۔ اس موقع پر کانگریس انتخابی مہم کمیٹی کے صدر نشین ملو بٹی وکرامارک سابق وزیر ڈی کے ارونا بھی موجود تھیں ۔ وجئے شانتی نے کہا کہ علحدہ تلنگانہ ریاست کانگریس نے تشکیل دیا تھا مگر جذبات کا استحصال کرتے ہوئے ٹی آر ایس نے اقتدار حاصل کرلیا ۔ کے سی آر کے ارکان خاندان نے ساڑھے چار سال کے دوران ریاست کو لوٹنے میں اہم رول ادا کیا جس کی وجہ سے حصول قرض میں تلنگانہ سارے ملک میں سرفہرست ریاست بن گئی اگر دوبارہ غلطی سے مزید 5 سال کے لیے ٹی آر ایس کو اقتدار حوالے کیا جاتاہے تو عوام کے پاس جو بھی جمع پونجی ہے وہ بھی چھین لی جائے گی ۔ تلنگانہ کی ترقی اور عوام کی خوشحالی کے لیے علحدہ تلنگانہ ریاست تشکیل دینے والی کانگریس کو حکومت تشکیل دینے کا موقع فراہم کرنے کی عوام سے اپیل کی ۔ وجئے شانتی نے سربراہ ٹی آر ایس کے سی آر کے اپوزیشن جماعتوں کے قائدین کے خلاف استعمال کیے جانے والے نازیبا ریمارکس کی سخت مذمت کی ۔ انہوں نے کہا کہ تلنگانہ کے عوام نے کے سی آر خاندان کی ترقی بہبود کے لیے نہیں بلکہ غریب عوام کی فلاح و بہبود کے لیے ٹی آر ایس کو ووٹ دیا تھا ۔ ٹی آر ایس کے دور حکومت میں سنہرا تلنگانہ ریاست نہیں بن سکا مگر کے سی آر کا خاندان گولڈن فیملی میں تبدیل ہوگیا ۔ تلنگانہ میں 4 ہزار کسانوں نے خود کشی کی ہے ۔ زرعی ترقی اور کسانوں کی فلاح و بہبود کے لیے موثر اقدامات نہ کرنے کی وجہ سے کسانوں کو خود کشی کرنے کے لیے مجبور ہونا پڑا ہے ۔ انتخابی فائدہ حاصل کرنے کے لیے اسمبلی تحلیل کرنے سے قبل کے سی آر نے رعیتو بندھو اور رعیتو بیمہ جیسی اسکیمات کو متعارف کرایا ہے مگر وہ کسانوں کے دلوں میں اپنے لیے جگہ بنانے میں پوری طرح ناکام ہوگئے ۔ فیس ری ایمبرسمنٹ اسکیم پر کانگریس نے کامیابی سے عمل آوری کی لیکن ٹی آر ایس حکومت نے اس کو نظر انداز کرتے ہوئے طلبہ کے مستقبل سے کھلواڑ کیا ہے ۔ ماں باپ کی خدمات اور ان کی خوشحالی کے لیے کام کرنے کا خواب دیکھنے والے بیروزگار نوجوانوں کو روزگار کے موقع فراہم نہیں کئے گئے اور انہیں مایوس کیا گیا ۔ ٹی آر ایس کا دور حکومت سمجھ سے باہر ہے ۔ کے جی تا پی جی مفت تعلیم کا وعدہ کیا گیا مگر 5 ہزار سرکاری اسکولس کو بند کردیا گیا ۔ پرگتی بھون تک محدود رہ کر نظم و نسق چلانے والے کے سی آر غریب عوام کے مسائل سے واقف نہیں ہے ۔ عوام کے درمیان پہونچنے یا ان سے ملاقات کرنے سے ہی مسائل کا پتہ چلتا ہے ۔ آبپاشی پراجکٹس کی تعمیرات اور بتکماں ساڑیوں کی تقسیم کے معاملے میں کے سی آر عوام کو دھوکہ دے رہے ہیں ۔ وجئے شانتی نے تلنگانہ کے عوام سے دوبارہ ٹی آر ایس کے دھوکہ میں نہ آنے کی اپیل کی ۔ عوامی حکومت کی تشکیل کے لیے کانگریس کو ووٹ دے کر بھاری اکثریت سے کامیاب بنانے کا مطالبہ کیا ۔۔

TOPPOPULARRECENT