Tuesday , October 23 2018
Home / Top Stories / ٹی آر ایس کی اُلٹی گنتی شروع، کانگریس کا دعویٰ

ٹی آر ایس کی اُلٹی گنتی شروع، کانگریس کا دعویٰ

تلنگانہ کے 31 پسماندہ طبقات کے محفوظ حلقوں میں کانگریس کی کامیابی یقینی : اتم کمار ریڈی

حیدرآباد۔ 14 ڈسمبر (سیاست نیوز) صدر تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی اُتم کمار ریڈی نے 31 پسماندہ طبقات کیلئے مختص اسمبلی حلقوں میں کانگریس کو 2019ء کے انتخابات میں کامیابی حاصل ہونے کا دعویٰ کرتے ہوئے کہا کہ ٹی آر ایس حکومت کی اُلٹی گنتی شروع ہوچکی ہے۔ آج گاندھی بھون میں (ایل ڈی ایم آر سی) پارٹی ورکرس سے پرکاشم ہال میں خطاب کرتے ہوئے کہا کہ کانگریس پارٹی نے جیت کا فارمولہ تیار کرتے ہوئے ایس سی، ایس ٹی طبقات کیلئے مختص 31 اسمبلی حلقوں پر خصوصی توجہ دی ہے اور گزشتہ چند ماہ سے ان حلقوں میں کام کرتے ہوئے عوامی مسائل کو حل کرنے اور حکومت کی ناکامیوں کا پردہ فاش کرنے کی کوشش کی جارہی ہے۔ پارٹی کے قائدین و کارکن گھر گھر پہونچ کر عوام سے ملاقات کررہے ہیں۔ صدر تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی نے کہا کہ پسماندہ طبقات کانگریس کیلئے ریڑھ کی ہڈی 2014ء کے عام انتخابات میں کانگریس نے 31 کے منجملہ صرف 6 حلقوں پر کامیابی حاصل کی تھی۔ ایس سی کیلئے مختص 19 حلقوں میں کانگریس نے 4 پر اور ایس ٹی کیلئے مختص 12 کے منجملہ 2 حلقوں پر کانگریس نے کامیابی حاصل کی تھی۔ جبکہ ٹی آر ایس نے 18 اسمبلی حلقوں پر کامیابی حاصل کی تھی۔ کامیابی کے معاملے میں کانگریس اور ٹی آر ایس کے درمیان صرف 9.72% کا فرق رہا ہے۔ اُتم کمار ریڈی نے کہا کہ پسماندہ طبقات نے چیف منسٹر کے سی آر کے جھوٹے وعدوں پر بھروسہ کیا۔ کے سی آر نے دلت طبقہ کے قائد کو چیف منسٹر بنانے کا وعدہ کیا۔ دلت طبقات کے ہر خاندان کو فی کس 3 ایکر اراضی دینے قبائیلی طبقات کو 12% تحفظات فراہم کرنے کا وعدہ کیا تھا جس پر عوام نے بھروسہ کیا لیکن کے سی آر نے انہیں دھوکہ دیا ہے۔ 31 ڈسمبر تک تمام 31 اسمبلی حلقوں میں کانگریس کے سنٹرل کمیٹیاں تشکیل دینے کی ہدایت دی۔ اس کے بعد بوتھ لیول کی کمیٹیاں تشکیل دینے کا مشورہ دیا۔ اتم کمار ریڈی نے کہا کہ تلنگانہ میں ٹی آر ایس حکومت کی اُلٹی گنتی شروع ہوچکی ہے۔ 2019ء کے عام انتخابات میں کانگریس تلنگانہ میں بھاری اکثریت سے کامیابی حاصل کرے گی اور راہول گاندھی ملک کے اگلے وزیراعظم ہوں گے۔ اگر تلنگانہ میں کانگریس کو اقتدار حاصل ہوتا ہے تو کانگریس پارٹی، کسانوں کے 2 لاکھ روپئے تک قرض معاف کرے گی۔ اہم فیصلوں پر کسانوں کو بونس بھی دیا جائے گا۔ زرعی انشورنس بھی حکومت ادا کرے گی۔ اندرا اکان ہاؤزنگ کے تمام بقایاجات جاری کردیئے جائیں گے اور ایک روم زائد تعمیر کرکے دیا جائے گا۔ سیکریٹری انچارج اے آئی سی سی تلنگانہ کانگریس اُمور آر سی کنٹیا نے تنظیمی سطح پر پارٹی کو مضبوط کرنے کی پارٹی قائدین کو ہدایت دی۔ اس موقع پر اے آئی سی سی، ایس سی سیل کے صدر کے راجو، ورکنگ پریسیڈنٹ تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی ملوبٹی وکرامارک کے علاوہ دوسرے موجود تھے۔

TOPPOPULARRECENT