Thursday , November 23 2017
Home / شہر کی خبریں / ٹی آر ایس کے بجٹ میں خفیہ ایجنڈہ

ٹی آر ایس کے بجٹ میں خفیہ ایجنڈہ

منحرف ارکان کی حوصلہ افزائی ، چیف منسٹر کے تحت خطیر رقم
حیدرآباد۔ 14۔ مارچ (سیاست نیوز) کانگریس کے رکن قانون ساز کونسل پی سدھاکر ریڈی نے الزام عائد کیا کہ ٹی آر ایس حکومت نے خفیہ ایجنڈہ کے تحت بجٹ تیار کیا ہے۔ تاکہ دیگر جماعتوں سے انحراف کی حوصلہ افزائی کی جاسکے۔ میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے سدھاکر ریڈی نے کہا کہ بجٹ میں خصوصی ترقیاتی فنڈ کے تحت چیف منسٹر نے اپنے پاس 4675 کروڑ روپئے کی گنجائش رکھی ہے۔ دراصل یہ بجٹ ٹی آر ایس ارکان اسمبلی اور دیگر جماعتوں کے ایسے ارکان کو الاٹ کیا جائے گا جو انحراف کیلئے تیار ہیں۔ انہوں نے کہا کہ دیگر جماعتوں سے انحراف کی حوصلہ افزائی کے خفیہ ایجنڈہ کے تحت یہ خطیر فنڈ چیف منسٹر کے تحت رکھے گئے ہیں۔ سدھاکر ریڈی نے بجٹ تقریر میں ریاستی وزیر کے ٹی راما راؤ کے نام کی شمولیت پر حیرت کااظہار کیا اور کہا کہ صرف ایک وزیر جو چیف منسٹر کے فرزند ہیں ، ان کے نام کی شمولیت دراصل ریاست بھر کیلئے نوشتہ دیوار ہے اور چیف منسٹر یہ بتانا چاہتے ہیں کہ ان کے جانشین کے ٹی آر ہوں گے۔ سدھاکر ریڈی نے بجٹ میں کمزور طبقات کے طلبہ کیلئے فیس باز ادائیگی کا تذکرہ نہ کرنے پر تنقید کی۔ انہوں نے تلنگانہ حکومت کے بجٹ کو ’’ہتھیلی میں جنت‘‘ قرار دیا اور کہا کہ چیف منسٹر نے ساری ریاست کو ’’بنگارو تلنگانہ‘‘ فلم دکھائی ہے۔

TOPPOPULARRECENT