Sunday , April 22 2018
Home / شہر کی خبریں / ٹی آر ایس کے نو منتخب ارکان راجیہ سبھا کی حلف برداری

ٹی آر ایس کے نو منتخب ارکان راجیہ سبھا کی حلف برداری

تلگو میں حلف لیا ، صدر نشین راجیہ سبھا وینکیا نائیڈو کی مبارکباد
حیدرآباد۔ 4 اپریل (سیاست نیوز) ٹی آر ایس کے نو منتخب تین ارکان نے آج راجیہ سبھا میں رکنیت کا حلف لیا۔ راجیہ سبھا کی کارروائی کے آغاز کے ساتھ ہی نو منتخب ارکان کی حلف برداری کا آغاز ہوا۔ کرناٹک، اڈیشہ اور اترپردیش کے ارکان کے بعد تلنگانہ کی باری آئی۔ سب سے پہلے بنڈاپرکاش نے تلگو میں حلف لیا۔ ان کے بعد جوگنی پلی سنتوش کمار اور پھر لنگیا یادو نے رکنیت کا حلف اٹھایا۔ تینوں ارکان نے تلگو میں حلف لیا۔ صدرنشین راجیہ سبھا ایم وینکیا نائیڈو نے تینوں ارکان کو مبارکباد پیش کی۔ انہوں نے تلنگانہ ارکان کی جانب سے تلگو میں حلف لینے پر مسرت کا اظہار کیا۔ کرناٹک، اڈیشہ اور اترپردیش کے ارکان نے اپنی علاقائی زبانوں میں حلف لیا۔ حلف لینے کے بعد تینوں ارکان صدرنشین ایم وینکیا نائیڈو سے ملے اور ان سے مبارکباد حاصل کی۔ حلف برداری کے موقع پر ریاست سے تعلق رکھنے والے کئی اہم قائدین پارلیمنٹ میں موجود تھے۔ جنہوں نے حلف برداری کا تینوں ارکان کو مبارکباد پیش کی۔ چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ کی شریک حیات ، سنتوش کمار کے والدین ، کویتا کے ارکان خاندان اور ریاستی وزیر فینانس ایٹلہ راجندرنے راجیہ سبھا کی خصوصی گیلری سے حلف برداری کا مشاہدہ کیا ۔جے سنتوش کمار تلگوچینل ٹی نیوز کے سربراہ اور چیف منسٹر کے چندر شیکھر رائو کے بھانجے ہیں۔ ٹی آر ایس کے قیام سے پہلے سے ہی سنتوش کمار سرگرم رہے اور وہ کے چندر شیکھر رائو کے بااعتماد رفقاء میں شمار کیے جاتے ہیں۔ تلنگانہ تحریک کے دوران اور حکومت کی تشکیل کے بعد کے سی آر نے کئی اہم ذمہ داریاں سونپیں جنہیں بحسن خوبی انجام دیا۔ حکومت کی تشکیل کے چار برسوں تک انہوں نے کوئی بھی سرکاری عہدہ حاصل نہیں کیا۔ حال ہی میں انہیں پارٹی کا جنرل سکریٹری مقرر کیا گیا۔ قومی سطح پر کے سی آر کے بااعتماد رفیق کی نئی دہلی میں موجودگی کے لیے سنتوش کمار کو راجیہ سبھا کی رکنیت دی گئی۔ واضح رہے کہ کے سی آر نے تیسرے محاذ کے قیام کے لیے علاقائی جماعتوں سے ملاقات کا آغاز کیا ہے۔ بی لنگیا یادو گزشتہ تین برسوں سے سرگرم سیاست میں ہیں۔ 1982ء میں انہوں نے تلگودیشم سے اپنے سیاسی سفر کا آغاز کیا۔ نلگنڈہ ضلع میں تلگویووتا اور تلگودیشم کے ضلعی صدر کی حیثیت سے خدمات انجام دیں۔ 1998ء تا 2012ء وہ متحدہ نلگنڈہ ضلع کے تلگودیشم صدر رہے۔ 2015ء میں انہوں نے ٹی آر ایس میں شمولیت اختیار کی۔ انہیں پارٹی کا ریاستی صدر مقرر کیا گیا ہے۔ چیف منسٹر نے یادو طبقے کو راجیہ سبھا کی رکنیت کے وعدے کی تکمیل کرتے ہوئے لنگیا یادو کو نامزد کیا جس کا یادو طبقے کی جانب سے غیر مقدم کیا جارہا ہے۔ ورنگل اربن ضلع کے ہنمکنڈہ سے تعلق رکھنے والے بی پرکاش مدیراج زمانۂ طالب علمی سے سرگرم سیاست میں ہیں۔ مدیراج طبقے کی بھلائی کے سلسلہ میں بی پرکاش نے نمایاں خدمات انجام دی ہیں۔ وہ کاکتیہ یونیورسٹی میں سنیٹ ممبر بھی رہے۔

TOPPOPULARRECENT