Wednesday , December 13 2017
Home / اضلاع کی خبریں / ٹی آر ایس دور حکومت میں کسانوں کا جینا محال

ٹی آر ایس دور حکومت میں کسانوں کا جینا محال

سوریا پیٹ میں منعقدہ جلسہ سے اتم کمار ریڈی اور دیگر کا خطاب
سوریاپیٹ /22 ستمبر ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) کانگریس جماعت واحد جماعت ہے جس نے اپنے دور حکومت میں ہر طریقہ کو مکمل انصاف دلانے میں کوئی کسر نہیں چھوڑا ۔ ملک کی عوام کانگریس کو اقتدار پر لانے کیلئے عام انتخابات کا بے چینی سے انتظار کر رہے ہیں ۔ بعض مفاد پرست سیاسی قائدین کانگریس کے مکمل صفایہ کیلئے ایک منصوبہ کے تحت کام کر رہے ہیں ۔ اپوزیشن کانگریس ایک سمندر کے مانند ہے ۔ ان خیالات کا اظہار کرتے جنرل سکریٹری و تلنگانہ پارٹی انچارج آر سی کو سنیتا نے سوریا پیٹ ترپوشی گارڈن فنکشن ہال میں کل رات اندر رعیتوں باٹا پروگرام کے تحت منعقدہ ایک بڑے جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ انہوں نے اس موقع پر اپنے خطاب میں مرکزی حکومت کو تیقن دکا نشانہ بنایا ۔ اور کہا کہ جس وقت سے مرکز میں بی جے پی بسر اقتدار آئی تب سے ملک کی حالت روز بہ روز ابتر ہوتی جارہی ہے ۔ ایک طرف ہندوتوا کی سرگرمیوں سے اقلیتوں کا جینا دوبھر ہوگیا ہے تو دوسری جانب معیشت ، صنعت ، حرفت میں ملک کو زبردست دھکہ لگا ہے ۔ انہوں نے وزیر اعظم نریندر مودی پر بھی راست تنقید کی اور کہا کہ باوقار عہدہ پر قابض رہ کر مودی اچھوتی حرکت کرتے ہوئے گروہ واری رقابتوں کو بڑھاوا دینے میں مصروف ہیں۔ اے آئی سی سیجنرل سکریٹری مسٹر کوسنیتا نے اپنے خطاب میں تلنگانہ حکومت نکتہ چینی کرتے ہوئے کہا کہ جس وقت سے ٹی ار ایس برسر اقتدار آئی تب سے علاقہ میں کسانوں کے خودکشی واقعات میں اضافہ ہوا ہے ۔ صدر کانگریس مسرز سونیا گاندھی نے تلنگانہ کو پسماندہ دیکھ کر جدید ریاست تلنگانہ کے قیام کا تحفہ دیا ۔ مگر جدید ریاست کے قیام کے بعد تلنگانہ میں ترقی سے زیادہ کرپشن عام ہوچکا ہے ۔ اور بہت جلد راہول گاندھی کی قیادت میں کانگریس کے ابھرنے کی پیش قیاسی کی ۔ پی سی سی صدر اتم کمار ریڈی نے جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ تلنگانہ حکومت کی کارکردگی پر شدید تنقید کی اور کہا کہ جس وقت سے ٹی آر ایس برسر اقتدار آئی تب سے کسانوں کا جینا اجیرت بن گیا ہے ۔ ایک طرف کسان حکومت کی جانب سے بروقت امداد نہ ملنے سے سنگین اقدام کرتے ہوئے خودکشی کر رہے ہیں تو دوسری جانب حکومت کے گمراہ کن پالیسیوں سے بدظن ہوکر کسان اپنے قدیم روایتیں پیشہ کو چھوڑکر مزدوری و محنت کو تریح دے رہے ہیں ۔ یہاں پر رعیتوںباٹا پروگرام کو کامیاب بنانے پر پارٹی ورکرس کو مبارکباد دی ۔ سی ایل پی قائدین جانا ریڈی کانگریس ترجمان علی شبیر نے اپنے خطاب میں میں کہا کہ تلنگانہ حکومت کی ناقص پالیسیوں کے سبب ٹی آر ایس کی الٹی گنتی کا آغاز ہوچکا ہے ۔ انہوں نے اس موقع پر اپنے خطاب میں رعیتوں باٹا پروگرام کے حوالہ سے بتایا کہ کانگریس نے کسانوں کے بڑھتے مسائل کے معاملہ کو لیکر تلنگانہ بھر میں اس پروگرام کے انعقاد کا فیصلہ کیا ہے ۔ جس کو روز بہ روز نہ صرف عوام کی تائید مل رہی ہے ۔ ساتھ ہی ساتھ کسانوں کا ایک برا طبقہ مذکورہ پروگرام میں شرکت کرتے ہوئے کانگریس کی تائید کر رہا ہے ۔ رکن اسمبلی کوداڑ مسز پدماوتی سینئیر کانگریس قائد ملو روی نے کہا کہ ان دنوں حکومت کسان کمیٹیوں کے قیام کا اعلان کرتے ہوئے ایک اور مرتبہ کسانوں کو دھوکہ دے رہی ہے ۔ اگر حکومت کو کسانوں سے ہمدردی ہوتو ایسا کام کرکے دکھلائیں ۔ جس کا راست کسانوں کو فائدہ حاصل ہو ۔ انہوں نے حکومت پر انتخابی وعدوں کا انحراف کرنے و آبرسانی پراجکٹوں کی تکمیل میں ناکامی کا بھی الزام عائد کیا اور کانگریس رعیتو باٹا پروگرام سے کسانوں کو انصاف ملنے کی امید ظاہر کی ۔ جلسہ کی صدارت سابق وزیر و سابق رکن ا سمبلی آر دامودھر ریڈی نے کی ۔ جلسہ کو سینئیر قائدین بھٹی وکرما ، وی داس وینکٹیا ، گوپال نے بھی خطاب کیا ۔ اس موقع پر ضلع کانگریس قائدین ، راجیشور ،۔ وینکٹ گوڑ ، ستیش کمار ، سید سلیم ، ایوب خان ، ابوبکر صدیق ، امجد علی ، عبدالرحیم کے علاوہ دیگر موجود تھے ۔ دریں اسناء کانگریس پارٹی قائدین و کارکنوں نے پارٹی آفس سے ایک بری ریالی نکالی ۔ ریاستی میں کئی سرکردہ قائدین نے شرکت کی ۔

TOPPOPULARRECENT