Thursday , October 18 2018
Home / شہر کی خبریں / ٹی آر ایس کی تشہیری گاڑی پر عوام کا حملہ

ٹی آر ایس کی تشہیری گاڑی پر عوام کا حملہ

عوامی ناراضگی میں اضافہ، پانی کے مسئلہ کی عدم یکسوئی پر شادنگر میں عوام کی برہمی
حیدرآباد۔11 اکٹوبر (سیاست نیوز) تلنگانہ راشٹرا سمیتی کے امیدواروں کو اضلاع میں عوامی ناراضگی کا سامنا ہے۔ انتخابی وعدوں کی عدم تکمیل اور ترقیاتی کاموں کو نظرانداز کرنے پر اضلاع میں امیدواروں کو انتخابی مہم سے واپس جانے پر مجبور کیا جارہا ہے۔ امیدواروں کے گھیرائو کی اطلاعات ملی ہیں۔ عوامی ناراضگی دن بہ دن شدت اختیار کررہی ہے۔ اب تو عوام ٹی آر ایس انتخابی مہم کی گاڑیوں پر حملہ کررہے ہیں۔ حملے کا تازہ واقعہ رنگاریڈی ضلع کے شادنگر اسمبلی حلقے میں پیش آیا جہاں ٹی آر ایس کی تشہیری گاڑی پر حملہ کرکے اسے نقصان پہنچایا گیا۔ اطلاعات کے مطابق فرخ نگر منڈل کے گنٹلاویلا تانڈا کے حدود میں جب تشہیری گاڑی پہنچی تو گائوں والوں نے حملہ کردیا۔ اس تانڈا میں پانی کے مسئلہ کی یکسوئی میں مقامی رکن اسمبلی اور ٹی آر ایس قائدین پر ناکامی کا الزام عائد کرتے ہوئے یہ حملہ کیا گیا۔ گائوں والوں کا کہنا تھا کہ اس سلسلہ میں بارہا نمائندگیوں کے باوجود کوئی کارروائی نہیں کی گئی لہٰذا ٹی آر ایس کو انتخابی مہم کی اجازت نہیں دی جائے گی۔ حملے میں تشہیری گاڑی کو نقصان پہنچا۔ گائوں والوں کی جانب سے گاڑی کو گھیر لینے اور فلیکسیوں کو پھاڑ دینے سے ہلکی کشیدگی پیدا ہوگئی۔ ٹی آر ایس قائدین نے گائوں والوں کو سمجھانے کی کوشش کی اور صورتحال کو کسی طرح قابو میں کیا۔ پارٹی نے گائوں گائوں انتخابی مہم کے لیے پرچارا ردھم کے نام سے تشہیری گاڑیوں کو تیار کیا ہے اور ہر اسمبلی حلقہ میں کئی گاڑیاں مہم میں مصروف ہیں۔ ریاست کے کئی اضلاع میں ٹی آر ایس امیدواروں کے خلاف عوامی ناراضگی کے واقعات میں روزافزوں اضافہ ہورہا ہے۔

TOPPOPULARRECENT