Saturday , June 23 2018
Home / ہندوستان / ٹی ایم سی کارکن کی نعش دستیابی کے بعد پرتشدد احتجاج

ٹی ایم سی کارکن کی نعش دستیابی کے بعد پرتشدد احتجاج

منشیات کی فروخت کے خلاف پولیس میں شکایت پر قتل کا شبہ

منشیات کی فروخت کے خلاف پولیس میں شکایت پر قتل کا شبہ
سلیگوڑی (مغربی بنگال) ۔ 5 ۔ جنوری (سیاست ڈاٹ کام) سلیگوڑی کے مضافات میں ترنمول کانگریس کے ایک کارکن کی نعش آج دستیاب ہوئی جس نے اس علاقہ میں منشیات کی فروخت کے خلاف اعتراض کیا تھا ۔ پارٹی کارکنوں کے احتجاجی مظاہرہ کے بعد پولیس نے 3 ملزمین کو گرفتار کرلیا ۔ پولیس کمشنر سلیگوڑی جگموہن نے بتایا کہ متوفی دیپانکر رائے کے والدین کی شکایت پر ایف آئی آر درج کرتے ہوئے 3 افراد کو حر است میں لے لیا گیا۔ نارتھ بنگال ڈیولپمنٹ منسٹر گوتم دیو نے یہ ادعا کیا کہ دیبانکر رائے ترنمول کانگریس کا سرگرم کارکن تھا اور 3 دن قبل بعض افراد کے خلاف پولیس میں شکایت درج کروائی تھی جو کہ علاقہ بھکتی نگر میں غیر قانونی منشیات فروحت کر رہے ہیں ۔ تاہم مقامی اپوزیشن پارٹیوں کا الزام ہے کہ گرفتار 3 ملزمین کا تعلق ٹی ا یم سی سے ہے ۔ قبل ازیں آج صبح نیمبو بستی جنگلاتی علاقہ میں دریائے تستیا کے کنارے ایک نوجوان کی نعش دستیاب ہوئی جس پر مقامی لوگوں نے غم و غصہ کی حالت میں احتجاجی مظاہرہ کرتے ہوئے ملزمین کے خلاف سخت کارروائی کا مطالبہ کیا۔ متوفی نوجوان کے والدین نے میڈیا کو بتایا کہ یہ واقعہ ایسے وقت پیش آیا جب ان کے لڑکے نے 3 دن قبل اس علاقہ منشیات فروخت کرنے والوں کے خلاف پولیس میں شکایت رج کروائی تھی اور اس نوجوان کو دھمکیاں دی گئی تھیں۔ انہوں نے بتایا کہ ایف آئی آر میں جن افراد کا نام لیا گیا تھا ، وہ کل شب ان کے مکان آنے اور بات چیت کے بہانہ دیبانگر رائے کو ساتھ لے گئے لیکن آج صبح زخموں سے چھلنی اس کی نعش جنگل میں دستیاب ہوئی۔ برہم ہجوم نے 4 ملزمین سے ایک کے مکان پر حملہ کر کے آگ لگادی ۔ علاقہ میں صورتحال کشیدہ ہونے پر پو لیس کی بھاری جمیعت کو متعین کردیا گیا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT