Wednesday , January 17 2018
Home / شہر کی خبریں / ٹی ہریش راؤ اور پی مہیندر ریڈی نے سکریٹریٹ میں جائزہ حاصل کرلیا

ٹی ہریش راؤ اور پی مہیندر ریڈی نے سکریٹریٹ میں جائزہ حاصل کرلیا

ڈی بلاک میں وزراء کیلئے چیمبرس الاٹ، اخباری نمائندوں سے بات چیت

ڈی بلاک میں وزراء کیلئے چیمبرس الاٹ، اخباری نمائندوں سے بات چیت

حیدرآباد۔/8جون، ( سیاست نیوز) وزیر اُمور مقننہ و آبپاشی ٹی ہریش راؤ اور وزیر ٹرانسپورٹ پی مہیندر ریڈی نے آج سکریٹریٹ میں اپنی وزارتوں کی ذمہ داری سنبھال لی۔ Dبلاک میں ان دونوں وزراء کے لئے چیمبرس الاٹ کئے گئے ہیں۔ ہریش راؤ کے عہدہ سنبھالنے کے موقع پر محکمہ آبپاشی کے اعلیٰ عہدیداروں کے علاوہ ڈپٹی چیف منسٹر و وزیر صحت ڈاکٹر ٹی راجیا، وزیر انفارمیشن ٹکنالوجی کے ٹی راما راؤ کے علاوہ ٹی آر ایس کے ارکان اسمبلی اور قائدین کی کثیر تعداد موجود تھی۔ اس موقع پر اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے ہریش راؤ نے کہا کہ بوئن پلی میں واقع مارکٹ یارڈ کو ڈاکٹر بی آر امبیڈکر کے نام سے موسوم کیا جائے گا۔ انہوں نے کہاکہ تلنگانہ میں آبپاشی شعبہ کی ترقی کیلئے حکومت جامع اقدامات کرے گی۔ انہوں نے کہاکہ کاکتیہ دور حکومت کے تالابوں اور کنوؤں کی حفاظت کیلئے اقدامات کئے جائیں گے تاکہ تلنگانہ میں پینے کے پانی اور آبپاشی کیلئے پانی کی قلت کے مسئلہ پر قابو پایا جاسکے۔ ہریش راؤ نے کہا کہ پرانہیتا چیوڑلہ پراجکٹ کو قومی پراجکٹ کا درجہ حاصل کرنے کیلئے ایک ٹاسک فورس تشکیل دی جائے گی۔انہوں نے کہا کہ ہر اسمبلی حلقہ میں ایک لاکھ ایکر اراضی کو آبپاشی کیلئے پانی سیراب کیا جائے گا۔ ہریش راؤ جو مارکٹنگ محکمہ کے بھی انچارج وزیر ہیں تیقن دیا کہ تلنگانہ میں چھوٹے کسانوں کو ان کی پیداوار کی فروخت کیلئے حکومت تمام تر سہولتیں فراہم کرے گی۔ انہوں نے کسانوں سے اپیل کی کہ وہ اپوزیشن کے پروپگنڈہ کا شکار ہوکر احتجاج سے گریز کریں۔ انہوں نے کہا کہ زرعی قرضہ جات کی معافی کے سلسلہ میں حکومت نے جو وعدہ کیا ہے اس پر بہر صورت عمل کیا جائے گا۔ انہوں نے امید ظاہر کی کہ 9جون بروز پیر سے شروع ہونے والا اسمبلی کا اجلاس پُرسکون انداز میں منعقد ہوگا اور تمام جماعتیں فلاحی اسکیمات اور عوامی بھلائی کے سلسلہ میں تعاون کریں گی۔ اسی دوران وزیر ٹرانسپورٹ مہندر ریڈی نے کہا کہ آر ٹی سی کو حکومت میں ضم کرنے سے متعلق تجویز کا کابینہ کے اجلاس میں جائزہ لیا جائے گا اور کابینہ کے فیصلہ کے بعد ہی اس سلسلہ میں کوئی قدم اٹھائے جائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ تلنگانہ میں مزید 30تا50نئے بس ڈپوز کے قیام کا منصوبہ ہے۔ اس کے علاوہ آر ٹی سی کو خسارہ سے اُبھار کر تلنگانہ میں منافع بخش ادارہ میں تبدیل کیا جائے گا۔ مہندر ریڈی نے کہا کہ پرانی اور خستہ بسوں کو تبدیل کرتے ہوئے نئی بسیں متعارف کی جائیں گی۔ وزیر ٹرانسپورٹ نے کہا کہ تلنگانہ ریاست کا کوئی بھی گاؤں آر ٹی سی کی بس سرویس کی سہولت سے محروم نہیں رہے گا۔

TOPPOPULARRECENT