Wednesday , September 26 2018
Home / کھیل کی خبریں / ٹی20 کی مقبولیت سے ٹسٹ کرکٹ کوخطرہ ،آئی سی سی پریشان

ٹی20 کی مقبولیت سے ٹسٹ کرکٹ کوخطرہ ،آئی سی سی پریشان

لندن ۔7 مارچ (سیاست ڈاٹ کام )ٹوئنٹی20 کرکٹ لیگز نے دنیا بھر کے شائقین اور کھلاڑیوں کو متوجہ کرلیا ہے۔ چالیس اوورز پر مشتمل مقابلوں اورکم وقت میں زیادہ دولت نے خاص طور پر نوجوان کرکٹرز کو روایتی ٹسٹ کرکٹ سے دورکردیا ہے۔ باصلاحیت کھلاڑی فٹ بال لیگز کی طرح ملک کی ٹیموں کی بجائے فرنچائز ٹیموں کو ترجیح دے رہے ہیں۔ یہ صورتحال انٹرنیشنل کرکٹ کونسل (آئی سی سی) کیلئے پریشان کن ہے۔ آئی سی سی نے بڑھتی ہوئی ٹوئنٹی20 لیگز کو کنٹرول کرنے پر غور شروع کردیا ہے۔ عالمی تنظیم اگلے ماہ ہندوستان کے شہر کولکتہ میں ہونے والے اجلاس میں ان تجاویز پر بحث کرے گی کہ کس طرح روایتی ٹسٹ کو مختصر ترین طرز کی فرنچائز لیگز کے اثرات سے محفوظ رکھا جائے۔ منتظمین کے پیش نظر یہ مسئلہ ہے کہ اگر ٹوئنٹی 20 لیگز کے پھیلائو کو نہ روکا گیا تو بین الاقوامی کرکٹ اور خاص طور پر ٹسٹ کرکٹ کو شدید نقصان پہنچ سکتا ہے۔ کینیڈا اور افغانستان کی کرکٹ لیگز کے اعلان کیساتھ ہی دنیا میں ٹوئنٹی20 لیگز بڑھتی جارہی ہیں۔ برطانوی اخبار کی رپورٹ کے مطابق لیگز سے سب سے زیادہ متاثر ہونے والے ویسٹ انڈین کرکٹ بورڈ نے ٹسٹ کرکٹ کو بچانے کے لئے تجاویز پیش کی ہیں۔ کہا گیا ہے کہ ان تجاویز کو آسٹریلیا اور انگلینڈ کی حمایت بھی حاصل ہے جبکہ ہندوستان کو بھی اس کے حق میں کیا جاسکتا ہے کیونکہ ہندوستان پہلے ہی اپنے کھلاڑیوں کو انڈین پریمیئر لیگ کے علاوہ دنیا میں کسی اور لیگ میں شرکت کی اجازت نہیں دیتا۔ اخبار کے مطابق ایک تجویز یہ ہے کہ 32 سال سے کم عمر کھلاڑی ملک کی لیگ سمیت 3 لیگز کھیل سکیں گے۔ 2023 کے بعد ٹوئنٹی20 لیگز کیلیے ونڈو مختص کرکے چھ ماہ صرف بین الاقوامی کرکٹ کیلئے رکھنے کی تجویز بھی ہے۔ لیگز کے منتظمین کو پابند کیا جائیگا کہ کھلاڑیوں کے معاوضے کا بیس فیصد متعلقہ بورڈ کو دیں اور انٹرنیشنل کھلاڑیوں کی تعداد کو کم کرنے اور کھلاڑیوں کو معاوضوں کی بروقت ادائیگی یقینی بنانے کی تجاویز شامل ہیں۔ اگر منظوری مل جائے تو ان اقدامات کا مقصد ٹوئنٹی 20 لیگز کو نقصان پہنچانا نہیں بلکہ گھریلو لیگز اور بین الاقوامی کرکٹ میں توازن پیدا کرنا ہے۔

TOPPOPULARRECENT