Wednesday , December 12 2018

پارلیمانی حلقہ میدک سے وجئے شانتی کا مقابلہ یقینی

سنگاریڈی /24 مارچ ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) اسمبلی اور لوک سبھا انتخابات کیلئے کانگریس پارٹی ہائی کمان نے ضلع میدک کے امیدواروں کو قطعیت دے دی ہے اور 28 مارچ کو کانگریس پارٹی امیدواروں کا باضابطہ اعلان کرے گی ۔ کانگریس ذرائع کے بموجب کانگریس پارٹی نے علاقہ تلنگانہ کے تمام موجودہ اراکین اسمبلی اور اراکین لوک سبھا کو متفقہ طور پر دوبارہ ٹک

سنگاریڈی /24 مارچ ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) اسمبلی اور لوک سبھا انتخابات کیلئے کانگریس پارٹی ہائی کمان نے ضلع میدک کے امیدواروں کو قطعیت دے دی ہے اور 28 مارچ کو کانگریس پارٹی امیدواروں کا باضابطہ اعلان کرے گی ۔ کانگریس ذرائع کے بموجب کانگریس پارٹی نے علاقہ تلنگانہ کے تمام موجودہ اراکین اسمبلی اور اراکین لوک سبھا کو متفقہ طور پر دوبارہ ٹکٹ دینے کا فیصلہ کیا ہے۔ سال 2009 کے عام انتخآبات کے شکست خوردہ امیدواروں کو بھی ان کے متعلقہ حلقوں سے دوبارہ ٹکٹ دیا جائے گا ۔ ضلع میدک کے 10 اسمبلی اور 2 لوک سبھا حلقہ جات کیلئے امیدواروں کا انتخاب کرتے ہوئے قطعی فہرست کانگریس پارٹی الیکشن کمیٹی کی منظوری کیلئے روانہ کی گئی موجودہ فہرست کے مطابق کانگریس پارٹی حلقہ لوک سبھا میدک سے فلمسٹار وجئے شانتی کو ایم پی ٹکٹ دینے کا من بنا لیا ہے ۔حلقہ پارلیمنٹ میدک سے ایم پی ٹکٹ کیلئے تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی نے بنڈی نرسا گوڑ ، سومیشور ریڈی اور اوما دیوی نے تمامتجویز کئے تھے لیکن کانگریس پارٹی کل ہند جنرل سکریٹری و انچارج امور آندھراپردیش ڈگ وجئے سنگھ نے دہلی میں سرکردہ تلنگانہ کانگریس قائدین سے مشاورت کے بعد وجئے شانتی کو حلقہ میدک سے موزوں ترین امیدوار قرار دیتے ہوئے انہیں ایم پی میدک ٹکٹ کیلئے کانگریس ہائی کمان سے سفارش کی ۔ حلقہ پارلیمنٹ میدک سے وجئے شانتی کو کانگریس پارٹی ٹکٹ ملنا طئے ہوچکا ہے وجئے شانتی کانگریس پارٹی میں شمولیت سے پہلے بی جے پی کے شعبہ خواتین کی کل ہند صدر تھیں اس کے بعد انہوں نے تلی تلنگانہ پارٹی قائم کی جس کو کچھ عرصہ بعد ٹی آر ایس پارٹی میں ضم کردیا گیا اور وجئے شانتی سال 2009 کے عام چناؤ میں حلقہ لوک سبھا میدک سے ٹی آر ایس ٹکٹ پر انتخابات میں حصہ لیا اور اپنے قریبی حریف کانگریس امیدوار نریندر ناتھ پر 6077 ووٹوں کی اکثریت سے کامیابی حاصل کی ۔ٹی آر ایس سربراہ کے سی آر نے وجئے شانتی کو اپنی چھوٹی بہن قرار دیا تاہم اندرون 4 سال ہی سیاسی بھائی بہن میں اختلافات پیدا ہوگئے اور وجئے شانتی کو ٹی آر ایس پارٹی سے معطل کردیا گیا ۔

اس کے بعد وجئے شانتی راست کانگریس کے اعلی قائدین سے ربط پیدا کرتے ہوئے کانگریس میں شمولیت اختیار کی اور حسب توقع انہیں کانگریس پارٹی سے ایم پی میدک ٹکٹ بھی حاصل ہو رہا ہے ۔ حلقہ پارلیمنٹ ظہیرآباد سیموجودہ ایم پی سریش کمار شیٹکر کو دوبارہ اسی حلقہ سے ایم پی ٹکٹ دیا جارہا ہے ۔ ضلع میدک کے 10 اسمبلی حلقہ جات کے منجملہ 8 اسمبلی حلقہ جات کیلئے کانگریس پارٹی امیدواروں کے ناموں کو قطعیت دی جاچکی ہے ۔ حلقہ اسمبلی ظہیرآباد سے ڈاکٹر جے گیتا ریڈی حلقہ اسمبلی سنگاریڈی سے ٹی جئے پرکاش ریڈی ، حلقہ اسمبلی اندول سے سی دامودھر راج نرسمہا ، حلقہ اسمبلی پٹنچیرو سے ٹی نندیشور گوڑ ، حلقہ اسمبلی نرساپور سے سنیتالکشا ریڈی حلقہ اسمبلی گجویل سے ٹی نرسا ریڈی ،حلقہ اسمبلی نارائن کھیڑ سے پی کشٹاریڈی اور حلقہ اسمبلی دوباک سے سی ایچ متیم ریڈی کو پارٹی ٹکٹ دیا جارہا ہے۔جبکہ حلقہ اسمبلی میدک اور سدی پیٹ سے امیدواروں کو تاحال قطعیت نہیں دی گئی ۔ حلقہ اسمبلی پٹن چیرو کیلئے موجودہ رکن اسمبلی نندیشور گوڑ اور صدر ضلع کانگریس و ایم ایل سی بھوپال ریڈی میں کچھ عرصہ سے رساکشی دیکھی جارہی تھی اور ایک مرحلیپر نندیشور گوڑ نے کے سی آر سے ملاقات کرتے ہوئے ٹی آر ایس میں شمولیت کا اشارہ دیا تھا ۔، لیکن کانگریس کے سینئیر قائدین کے تیقن پر انہوں نے کانگریس پارٹی کو نہیں چھوڑا اور بالاخر حلقہ اسمبلی پٹن چیرو سے نندیشور گوڑ کو ہی کانگریس پارٹیٹکٹ حاصل ہوا ہے ۔ بلدیہ منڈل اور ضلع پریشد کے انتخآبات کے اختتام کے بعد 10 اپریل سے اسمبلی اور لوک سبھا انتخابات کی مہم شروع ہوگی ۔ ضلع میدک میں 30 اپریل کو رائے دہی اور 16 مئی کو رائے شماری ہوگی ۔

TOPPOPULARRECENT