Wednesday , January 24 2018
Home / ہندوستان / پارلیمانی کمیٹی برائے دفاع کا سرحدی علاقہ نتھولا کا دورہ

پارلیمانی کمیٹی برائے دفاع کا سرحدی علاقہ نتھولا کا دورہ

کولکتہ۔ 29 اکتوبر (سیاست ڈاٹ کام) پارلیمانی کمیٹی برائے دفاع سکم کا مطالعہ دورہ کرے گی جس کا آغاز ہند ۔ چین سرحد کے درۂ نتھولا سے ہوگا۔اتراکھنڈ کے سابق چیف منسٹر بی سی کھنڈوری کی زیرقیادت کمیٹی نے سرحد پار واقع درۂ نتھولا تک سڑک اور دیگر انفراسٹرکچر کا معائنہ کیا۔ سکم کے راجیہ سبھا رکن پارلیمنٹ اور رکن کمیٹی ہشے لچھونگ پا نے کہا کہ

کولکتہ۔ 29 اکتوبر (سیاست ڈاٹ کام) پارلیمانی کمیٹی برائے دفاع سکم کا مطالعہ دورہ کرے گی جس کا آغاز ہند ۔ چین سرحد کے درۂ نتھولا سے ہوگا۔اتراکھنڈ کے سابق چیف منسٹر بی سی کھنڈوری کی زیرقیادت کمیٹی نے سرحد پار واقع درۂ نتھولا تک سڑک اور دیگر انفراسٹرکچر کا معائنہ کیا۔ سکم کے راجیہ سبھا رکن پارلیمنٹ اور رکن کمیٹی ہشے لچھونگ پا نے کہا کہ کمیٹی لوک سبھا اور راجیہ سبھا ارکان سمیت 9 ارکان پر مشتمل ہے۔ سینئر عہدیدار بھی شامل ہیں۔ وزارت دفاع اور بارڈر روڈس ڈیولپمنٹ پراجیکٹ کے عہدیداروں کو فوج کی جانب سے صیانتی اقدامات اور انفراسٹرکچر کے بارے میں تفصیلات سے واقف کروایا گیا۔ نتھولا کا دورہ کرنے والی کمیٹی نے سابق وزیراعظم ایچ ڈی دیوے گوڑا بھی شامل ہیں۔ لچھونگ پا نے کمیٹی کے اپنے ساتھیوں کو کئی معاملات سے خاص طور پر سرحدی شمالی ہند کی ریاستوں بشمول سکم واقف کروایا۔سرحد پر انفراسٹرکچر کو دوبارہ مستحکم کرنے کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ہماری سرحدات کا آغاز مناسب سڑکوں کے انتظامی نظام سے ہونا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے پڑوسی ممالک کا انفراسٹرکچر نسبتاً بہتر ہے اور اس کی اچھی طرح دیکھ بھال کی جاتی ہے۔ لچھونگ پانے معاوضہ کی ادائیگی اور سکم میں فوج کی جانب سے محصلہ اراضی کے بارے میں پیدا ہونے والے تنازعات کا مسئلہ بھی اٹھایا تھا۔

TOPPOPULARRECENT