Tuesday , February 20 2018
Home / سیاسیات / پارلیمنٹ اجلاس طلبی کی ہدایت دی جائے

پارلیمنٹ اجلاس طلبی کی ہدایت دی جائے

صدر جمہوریہ کو کانگریس کا مکتوب ‘ حکومت پر راہ فرار کا الزام

نئی دہلی 23 نومبر ( سیاست ڈاٹ کام ) کانگریس نے آج حکومت پر الزام عائد کیا کہ وہ پارلیمنٹ سرمائی اجلاس کو تاخیر کا شکار کر رہی ہے اور ایسا کرنے کا کوئی جواز بھی پیش نہیں کر رہی ہے ۔ پارٹی نے صدر رام ناتھ کووند سے رجوع ہوتے ہوئے اپیل کی کہ مرکزی حکومت کو پارلیمنٹ اجلاس جلد طلبک رنے کی ہدایت دی جائے ۔ کانگریس پارلیمانی پارٹی نے 21 نومبر کو صدر جمہوریہ کو مکتوب روانہ کرتے ہوئے ادعا کیا تھا کہ پارلیمنٹ اجلاس کو طلب کرنے سے گریز کرنا غیر صحتمندانہ مثال قائم کرے گا ۔ پارٹی نے این ڈی اے حکومت پر تاخیر کا کوئی جواز پیش کئے بغیر تاخیر کرنے کا الزام عائد کیا ۔ پارٹی نے ادعا کیا تھا کہ غیر رسمی طور پر حکومت کی جانب سے سشن میں تاخیر کی وجہ کو گجرات اسمبلی انتخابات قرار دیا جا رہا ہے ۔ کانگریس کا استدلال تھا کہ پارلیمنٹ اجلاس مروجہ قوانین اور اصولوں کی بنیاد پر کیا جاتا ہے نہ کہ انتخابی شیڈول کی مطابقت سے ۔ کانگریس کے اس مکتوب پر راجیہ سبھا میں قائد اپوزیشن غلام نبی آماد ‘ لوک سبھا میں کانگریس لیڈر ملکارجن کھرگے ‘ راجیہ سبھا میں پارٹی کے ڈپی لیڈر آنند شرما ‘ لوک سبھا میں اس کے چیف وہپ جیوتیر آدتیہ سندھیا اور وہپ دیپیندر ہوڈا نے دستخط کئے ہیں ۔ ان قائدین نے پارٹی کے اس الزام کا اعادہ کیا کہ حکومت پارلیمنٹ کا سامنا کرنے سے بچنا چاہتی ہے اور وہ سوالوں کے جواب دینے سے فرار اختیار کر رہی ہے ۔ وہ کرپشن اور اپنی غیر مقبول پالیسیوں پر تنقیدوں کا شکار ہے ۔ مکتوب میں صدر جمہوریہ سے کہا گیا ہے کہ پارلیمنٹ سرمائی اجلاس کی طلبی میں عمدا تاخیر سے کام لیا جا رہا ہے جبکہ روایت یہ ہے کہ سرمائی اجلاس 22 نومبر سے طلب کیا جاتا ہے اور یہ 20 ڈسمبر کو اختتام پذیر ہوتا ہے تاہم اس بار ایسا نہیں کیا گیا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT