Wednesday , December 12 2018

پارلیمنٹ میں تحریک عدم اعتماد پر بحث کرنے بی جے پی کو چیالنج

ایوان میں معمولی احتجاج پر کارروائی کے التواء پر اظہار افسوس ، تلگودیشم ایم پیز کا ردعمل
حیدرآباد 21 مارچ ( سیاست نیوز ) تلگودیشم پارٹی نے بی جے پی زیر قیادت مرکزی حکومت کو چیلنج کیا کہ اگر حکومت میں ہمت ہوتو پارلیمنٹ میں حکومت کے خلاف پیش کردہ تحریک عدم اعتماد پر مباحث کیلئے پہل کرے ۔ آج اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے ارکان پارلیمان تلگودیشم پارٹی مسرس ٹی نرسمہم ، اے سرینواس ، ایم بابو مرلی موہن نے یہ بات کہی اور بتایا کہ مرکزی حکومت کے خلاف اب تک چار مرتبہ تحریک عدم اعتماد پیش کی گئی ۔ ارکان پارلیمان نے کہا کہ صرف ڈی ایم کے اور تلنگانہ راشٹرا سمیتی کے ا رکان پارلیمان کی معمولی نوعیت کی ہنگامہ آرائی و ا حتجاج کی تیاری پر پارلیمانی کارروائی کو مسلسل ملتوی کردیا جارہا ہے ۔ ارکان پارلیمان تلگودیشم پارٹی نے اس بات کا ادعاء کیا کہ حکومت کے خلاف پیش کردہ تحریک عدم اعتماد پر مباحث ہونے تک خاموشی اختیار نہیں کی جائے گی بلکہ اپنے احتجاج میں مزید شدت پیدا کی جائے گی ۔ کیونکہ پارلیمنٹ میں کی جانے والی جدوجہد کا مرکزی حکومت پر کوئی اثر مرتب نہیں ہو رہا ہے ۔ ارکان پارلیمان نے سخت الفاظ میں کہا کہ اگر مرکزی حکومت کا یہی رویہ جاری رہنے کی صورت میں بی جے پی کیلئے ہر روز ایک لاکھ ووٹوں کی کمی واقع ہوگی ۔ لہذا اپنے طرز عمل سے باز آکر تحریک عدم اعتماد پر مباحث یقینی بنانے کیلئے بی جے پی حکومت سے آگے آنے کی ضرورت پر زور دیا ۔

TOPPOPULARRECENT