Monday , November 20 2017
Home / شہر کی خبریں / پارلیمنٹ میں نریندر مودی کی نشست کے قریب ٹی آر ایس ایم پیز کا احتجاج

پارلیمنٹ میں نریندر مودی کی نشست کے قریب ٹی آر ایس ایم پیز کا احتجاج

ہائی کورٹ کی تقسیم پر دباؤ ، مرکز سے تیقن تک احتجاج جاری رکھنے کا عزم
حیدرآباد ۔ 3 ۔ اگست (سیاست نیوز) ٹی آر ایس ارکان پارلیمنٹ نے آج لوک سبھا میں وزیراعظم نریندر مودی کی نشست کے روبرو خاموش احتجاج منعقد کیا اور ہائی کورٹ کی تقسیم کا مطالبہ کیا ۔ ٹی آر ایس کے ارکان پارلیمنٹ اجلاس کے آغاز کے ساتھ ہی وزراء کی نشستوں کی طرف بڑھے اور وزیراعظم نریندر مودی کی نشست کے روبرو خاموش کھڑے ہوگئے ۔ ان کے ہاتھوں میں پلے کارڈس تھے جس پر ہائیکورٹ کی عاجلانہ تقسیم کا مطالبہ درج تھا۔ ارکان پارلیمنٹ کویتا ، جتیندر ریڈی ، بی سمن، ویشویشور ریڈی ، جی نگیش ، ونود کمار اور دوسروں نے کافی دیر تک خاموش احتجاج جاری رکھا۔ ارکان پارلیمنٹ نے مطالبہ کیا کہ مرکزی حکومت ہائیکورٹ کی عاجلانہ تقسیم کو یقینی بنائے۔ بعد میں اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کویتا نے کہا کہ مرکزی حکومت سے بارہا نمائندگی کے باوجود ہائیکورٹ کی تقسیم کا عمل مکمل نہیں کیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ تلنگانہ ریاست کے قیام کو ایک سال مکمل ہوگیا لیکن آج تک تلنگانہ کیلئے علحدہ ہائیکورٹ قائم نہیں کی گئی۔ انہوں نے کہا کہ تلنگانہ عوام کو اپنے مقدمات کی یکسوئی کے سلسلہ میں کئی دشواریوں کا سامنا ہے ۔ کویتا نے کہا کہ وزیراعظم نریندر مودی کی جانب سے واضح تیقن تک ٹی آر ایس کا احتجاج جاری رہے گا۔ انہوں نے کہا کہ سابق میں وزیراعظم اور وزیر قانون نے ہائیکورٹ کی تقسیم کا یقین دلایا تھا۔ انہوں نے الزام عائد کیا کہ آندھرا سے تعلق رکھنے والے مرکزی وزراء اور تلگو دیشم قائدین ہائیکورٹ کی تقسیم میں رکاوٹ پیدا کر رہے ہیں۔ ان کے دباؤ کے سبب مرکز ہائیکورٹ کی تقسیم میں تاخیر کر رہا ہے۔

TOPPOPULARRECENT