Monday , June 18 2018
Home / سیاسیات / پارلیمنٹ کے اجلاس سے قبل گورنروں کے تقررات کا امکان برقرار، حکومت کا بیان

پارلیمنٹ کے اجلاس سے قبل گورنروں کے تقررات کا امکان برقرار، حکومت کا بیان

نئی دہلی۔ 25 جون (سیاست ڈاٹ کام) حکومت نے آج پارلیمنٹ کے بجٹ اجلاس سے قبل جس کا 7 جولائی سے آغاز ہوگا، نئے گورنروں کے تقررات کے امکان کو مسترد نہیں کیا اور کہا کہ 3 تا 4 دن بعد ہی کوئی بات کہی جاسکے گی۔ مرکزی وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ نے ایک پریس کانفرنس سے خطاب کے دوران کہا کہ وہ فی الحال کسی بھی امکان کو مسترد نہیں کرسکتے۔ ان سے پارلیمنٹ

نئی دہلی۔ 25 جون (سیاست ڈاٹ کام) حکومت نے آج پارلیمنٹ کے بجٹ اجلاس سے قبل جس کا 7 جولائی سے آغاز ہوگا، نئے گورنروں کے تقررات کے امکان کو مسترد نہیں کیا اور کہا کہ 3 تا 4 دن بعد ہی کوئی بات کہی جاسکے گی۔ مرکزی وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ نے ایک پریس کانفرنس سے خطاب کے دوران کہا کہ وہ فی الحال کسی بھی امکان کو مسترد نہیں کرسکتے۔ ان سے پارلیمنٹ کے بجٹ اجلاس کے آغاز سے قبل بعض گورنروں کے تقررات کے امکانات کے بارے میں سوال کیا گیا تھا، انہوں نے کہا کہ وہ تین یا چار دن بعد ہی جواب دے سکیں گے۔ وزیر داخلہ نے کہا کہ وہ اس موقف میں نہیں ہیں کہ اس بات پر تبصرہ کرسکیں کہ کیا گورنر گوا اور مغربی بنگال بی وی وانچو اور ایم کے نارائنن اپنے عہدوں پر برقرار رہیں گے۔ ایسی اطلاعات ہیں کہ وانچو اور نارائنن دونوں کو سی بی آئی کی جانب سے گواہوں کی حیثیت سے آگسٹا ویسٹ لینڈ ہیلی کاپٹر اسکام کے سلسلے میں جرح کرنے کے لئے حکومت سے اجازت طلب کی گئی ہے۔ چھتیس گڑھ اور یوپی کے گورنرس پہلے ہی اپنے استعفے پیش کرچکے ہیں۔ ذرائع کے بموجب بعض دیگر گورنرس کو بھی نئی حکومت نے اقتدار سنبھالنے کے بعد اشارہ دیا ہے کہ انہیں بھی مستعفی ہوجانا چاہئے۔ ذرائع کے بموجب حکومت بی جے پی کے بعض کہنہ مشق قائدین کو تقریباً 10 ریاستوں میں بطورِ گورنر مقرر کرنا چاہتی ہے۔ ناگالینڈ کے گورنر اشونی کمار اور نارائنن سمجھا جاتا ہے کہ مرکز کو استعفے دینے پر اپنی آمادگی سے حکومت کو واقف کرواچکے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT