Wednesday , December 12 2018

پارلیمنٹ کے سرمائی اجلاس میں رام مندر تعمیر کے آرڈیننس کی عدم منظوری کیخلاف انتباہ

وی ایچ پی سے سارے ملک کا نقشہ بدل دیا جائے گا، رام راجو وی ایچ پی اسٹیٹ صدر کا بیان
حیدرآباد۔13اکٹوبر(سیاست نیوز) واشوہندو پریشد نے سخت الفاظ میںمرکزی حکومت کوانتباہ دیتے ہوئے کہاکہ اگر پارلیمنٹ کے سرمائی اجلاس میںمودی حکومت پارلیمنٹ میں رام مندر کی تعمیر کے لئے آرڈیننس منظوری نہیں کرتی ہے تو وشواہند وپریشد سارے ملک میں ایسا ماحول پیدا کردیاجائے گا جس سے ملک کا نقشہ ہی بدل جائے گا۔ آج یہاں میڈیا سے بات کرے ہوئے وشواہندو پریشد کے ریاستی صدر رام راجونے کہاکہ وی ایچ پی کی حالیہ مہاسبھا جو دہلی میںمنعقد ہوئی جس میںفیصلہ لیاگیا ہے کہ ماہ اکٹوبر سے پورے ملک میںرام مندر کی تعمیر کے لئے مہم کی شروع کی جائے ۔ انہو ںنے کہاکہ اکٹوبر میں28ریاست کے گورنرس سے وی ایچ پی قائدین ملاقات کرتے ہوئے تحریری نمائندگی کریںگے اورمطالبہ کریں گے کہ رام مندر کی تعمیر کے لئے آرڈیننس کی تشکیل عمل میںلائی جائے جبکہ ماہ نومبر میں ہر پارلیمانی حلقے میں ہمارے مطالبات پر مشتمل پبلک میٹنگ کرتے ہوئے متعلقہ رکن پارلیمنٹ پر دبائو ڈالا جائے گا اور 18 ڈسمبر کو بڑے پیمانے پر رام مندر کی تعمیر کے لئے ملک بھر میںخصوصی پوجا کرائی جائے گی۔ وی ایچ پی قائد نے دعوی کیاہے کہ دہلی میںہندوسادھوئوں او رسنتوں کے میٹنگ میں مندر کی تعمیر کے لئے مستقبل کی حکمت عملی کے متعلق لئے گئے فیصلے کے بعد صدر جمہوریہ ہند رام ناتھ کویند سے بھی ہندوسادھوں کے وفد نے ملاقات کی اور ان سے آرڈیننس کے متعلق نمائندگی کی جس پر صدر جمہوریہ ہندنے یقین دلایا کہ وہ اس معاملے میںبھرپور مدد کریںگے۔

TOPPOPULARRECENT