Saturday , December 16 2017
Home / Top Stories / پارلیمنٹ کے مانسون سیشن کی دوبارہ طلبی کیلئے حکومت کا غور

پارلیمنٹ کے مانسون سیشن کی دوبارہ طلبی کیلئے حکومت کا غور

جی ایس ٹی بل کے بشمول اہم بلوں کی منظوری ضروری ، اصلاحات کے عمل کے لئے حکومت کا کھلا ذہن ، وینکیا نائیڈو کا بیان
نئی دہلی۔ 25 اگست ۔ ( سیاست ڈاٹ کام )حکومت نے آج کہا کہ وہ پارلیمنٹ کے مانسون سیشن کو دوبارہ طلب کرنے پر غور کررہی ہے تاکہ جی ایس ٹی بل کے بشمول اہم بلوں کو منظور کرلیا جاسکے۔ اصلاحات کے اقدامات کرنے کیلئے بعض ترمیمات پروہ اپنا کھلا ذہن رکھتی ہے ۔ اپوزیشن پارٹیوں کے قائدین سے بھی مشاورت کا آغاز ہوچکا ہے ۔ وزیر پارلیمانی اُمور ایم وینکیا نائیڈو نے لوک سبھا میں اپوزیشن لیڈر کانگریس ملکارجن کھرگے سے ملاقات کی اور تمام سیاسی پارٹیوں سے اپیل کی ہے کہ وہ پارلیمنٹ کی کارروائی کوپرسکون طورپر چلانے میں حکومت سے تعاون کریں ۔ یہ وسیع تر قومی مفادات میں ہے ۔ حکومت مانسون سیشن کے دوران کوئی کام کاج نہیں کرسکی اس کو اہم بلوں کی منظوری میں بھی ناکامی ہوئی ہے ۔ پارلیمنٹ کا مانسون سیشن تقریباً ضائع ہوگیا ہے ۔ وینکیا نائیڈو جنھوں نے کہا تھا کہ انھوں نے قبل ازیں ہی اس مسئلہ پر کئی پارٹیوں کے قائدین سے مشاورت کی ہے ، صدر کانگریس سونیا گاندھی اور نائب صدر کانگریس راہول گاندھی سے بھی ملاقات کا ارادہ رکھتے ہیں ۔ اگر پارلیمنٹ کی کارروائی کو پرسکون چلانے کیلئے یہ ملاقات ضروری ہے تو وہ ان سے ضرور ملاقات کریں گے ۔ مشاورت و تبادلہ خیال کے بعد حکومت ضرورت پڑنے پر مانسون سیشن کو دوبارہ طلب کرے گی جس میں اہم بلوں کو منظور کرلیا جائے گا ۔ میں تمام سیاسی پارٹیوں سے اپیل کرتا ہوں کہ وہ قومی مفادات کو ملحوظ رکھ کر حکومت کا ساتھ دیں ۔ پارلیمنٹ میں کام کاج کی اجازت دی جانے کی صورت میں صحت مندانہ مباحث کا کوئی متبادل نہیں ہوسکتا ۔ وینکیا نائیڈو نے ایک پریس کانفرنس میں کہا کہ اہم بلوں جیسے جی ایس ٹی ، رئیل ایسٹیٹ ریگولیشن بل اور اراضی بل نہایت ہی اہم بلس ہیں۔ جی ایس ٹی بل کی منظوری میں تاخیر سے ہندوستان کے عوام خاص کر ملک کے نوجوانوں کے خواب چکنا ہوں گے جو روزگار کے لئے پریشان ہیں۔ پارلیمنٹ سیشن کی طلبی کے لئے اگر چیکہ ابھی تاریخ طئے نہیں کی گئی ہے ۔ مانسون سیشن کو ستمبر میں کچھ دنوں کے لئے دوبارہ طلب کیا جاسکتا ہے ۔

حکومت کسی بھی صورت جی ایس ٹی بل کی منظوری کو یقینی بنانا چاہتی ہے ۔ حکومت نے سیشن کی دوبارہ طلبی کا اختیار کھلا رکھا ہے ۔ 13 جولائی کو مانسون سیشن کو غیرمعینہ مدت کیلئے ملتوی کرنے کے بعد دونوں ایوان کے لئے فوری اعلامیہ جاری کرنے کی سفارش نہیں کی گئی ۔ اپوزیشن پارٹیوں سے اپیل کرتے ہوئے وینکیا نائیڈو نے کہاکہ ان بلوں کی منظوری میں اپوزیشن کی تائید ضروری ہے ۔ حکومت تمام مسائل پر تبادلہ خیال کرنے کے لئے تیار ہے ۔ اس کیلئے تمام سیاسی پارٹیوں سے مسلسل ربط پیدا کیا جارہا ہے اور یہ سیاسی مفادات سے بالاتر والی کوشش ہے ۔ وینکیا نائیڈو متواتر اپوزیشن پارٹیوں سے اپیل کررہے ہیں کہ وہ حکومت کی مدد کرتے ہوئے جی ایس ٹی بل کو منظور کروانے میں پہل کریں ۔ سیاسی پارٹیوں سے قومی مفاد میں سوچنے کے لئے زوردیتے ہوئے وینکیا نائیڈو نے کہا کہ یہ نہایت ہی ضروری ہے خاص کر عالمی سطح پر مالیاتی صورتحال کے پس منظر میں تمام کو قومی مفاد میں سوچنا چاہئے ۔ ان سوالات پر کہ کانگریس اور بعض دیگر پارٹیاں جی ایس ٹی بل میں ترمیمات کیلئے زور دے رہے ہیں آیا حکومت ان سے متفق ہے ۔ وینکیا نائیڈو نے کہا کہ پارلیمنٹ کو کام کاج کرنے دیجئے اس کے بعد بلوں کو منظور کرلیا جائے گا ۔ پارلیمنٹ کے باہر ترمیمات کو منطور نہیں کیا جاسکتا ۔

TOPPOPULARRECENT