Saturday , July 21 2018
Home / سیاسیات / پارٹی موقف کے برعکس کانگریس کے فیصلہ کو یدی یورپا کی حمایت

پارٹی موقف کے برعکس کانگریس کے فیصلہ کو یدی یورپا کی حمایت

لنگایت کو علیحدہ مذہب کا درجہ د ینے کی سفارش
بنگلورو ۔20 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) کرناٹک میں لنگایت کو الگ مذہب کا درجہ دئے جانے کی سفارش کو لے کر بی جے پی نے کانگریس کی تنقید کی ہے، لیکن کرناٹک میں بی جے پی کے ریاستی صدر بی ایس یدی یوروپا نے پارٹی کے موقف سے الگ بیان دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ بی جے پی اکھل بھارتیہ ویر شوو سمودائے مہا سبھا کے فیصلہ کیساتھ ہے۔بی ایس یدی یورپا نے ایک بیان جاری کرکے کہا کہ میری اپیل ہے کہ اب جب ریاستی حکومت نے اس کو لے کر سفارش کردی ہے تو اکھل بھارتیہ ویر شوو مہاسبھا کو فوری طور پر ایک میٹنگ بلانی چاہئے ، اس میں سفارش کی حمایت اور مخالفت میں بحث کرنی چاہئے اور وہ سماج کیلئے ایک مشعل راہ بنے۔اس سے پہلے بی جے پی نے پیر کو الزام لگایا تھا کہ کرناٹک کے وزیراعلی سدا رمیا ووٹ بینک کی سیاست کررہے ہیں جبکہ کانگریس نے کہا کہ یدی یورپا خود ریاست میں لنگایت سماج کے بڑے لیڈر ہیں اور انہوں نے لنگایت سماج کو الگ مذہب کا درجہ دینے کے مطالبہ پر دستخط کئے تھے۔لنگایت سماج کو الگ مذہب کا درجہ دینے کو لے کر گزشتہ کئی مہینوں سے قیاس آرائی کا دور جاری تھا۔ پیر کو کرناٹک کے وزیر اعلی سدا رمیا نے لنگایت برادری کو الگ مذہب کا درجہ دئے جانے کی سفارش منظور کرلی۔ اب یہ سفارش مرکزی حکومت کے پاس بھیجی جائے گی ، جسے سیاسی طور پر انتہائی حساس مانے جانے والے اس مطالبہ پر حتمی فیصلہ کرنا ہوگا۔دوسری طرف کرناٹک بی جے پی کے جنرل سکریٹری پی مرلی دھرن نے ریاست کی حکمراں پارٹی کانگریس پر تقسیم کرو اور حکومت کرو کی پالیسی کا الزام لگایا ہے۔

TOPPOPULARRECENT