Saturday , November 25 2017
Home / Top Stories / پارچہ اور فولاد کی صنعتوں کیلئے برقی سبسیڈی

پارچہ اور فولاد کی صنعتوں کیلئے برقی سبسیڈی

انتظامیہ اور ورکرس کی بہبود کیلئے چیف منسٹر کے سی آر کا فیصلہ
حیدرآباد ۔ 27جون ( این ایس ایس )  حکومت تلنگانہ نے ریاست میں بحران کا سامنا کرنے والی چند صنعتوں کو راحت فراہم کرتے ہوئے برقی شرحوں میں ایک سال کیلئے سبسیڈی دینے کا فیصلہ کی ہے ۔ چیف منسٹر کے چندر  شیکھر راؤ نے چیف سکریٹری راجیو شرما اور ایڈیشنل سکریٹری شانتی کماری سے بالخصوص پارچہ ‘ ملبوسات ‘ آہنی و فولاد کی صنعتوں کو درپیش مسائل پر تبادلہ خیال کے بعد ان دونوں کو ایک سال کیلئے برقی شرحوں میں سبسیڈی دینے کا کلیدی فیصلہ کیا ۔ کے سی آر نے اعلان کیا کہ ان دونوں پارچہ اورفولاد کی صنعتوں سے یہ رعایت دی جارہی ہے ۔ یہ فیصلہ ایک ایسے وقت کیا گیا ہے جب برقی شرحوں اور آر ٹی سی بس کرایوں میں حالیہ اضافہ پر اپوزیشن کی طرف سے حکومت کو سخت تنقیدوں کا نشانہ بنایا جارہا ہے ۔ کے سی آر نے عہدیداروں سے کہا کہ پارچہ ‘ ملبوسات ‘ فولاد و آہنی کی صنعتی پیداوار میں اضافہ کیلئے سبسیڈی فراہم کی جائے ۔ پارچہ صنعت کو سبسیڈی کے طور پر 2روپئے فی یونٹ اور فولاد کی صنعت کو 1.50 روپیہ فی یونٹ کی شرح پر برقی سربراہ کی جائے گی ۔ حکومت کے ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ پارچہ کی صنعت سے 40,000 اور آہنی و فولاد کی صنعت سے 5000 ورکرس وابستہ ہیں اور ان دونوں صنعتوں کو دی جانے والی سبسیڈی سے ان ورکرس کے مفادات کا تحفظ ہوگا ۔

TOPPOPULARRECENT