Tuesday , December 19 2017
Home / ہندوستان / پاریکر کو چیف منسٹر گوا مقرر کرنے کے گورنر کے فیصلے کو سپریم کورٹ میں کانگریس کا چیلنج

پاریکر کو چیف منسٹر گوا مقرر کرنے کے گورنر کے فیصلے کو سپریم کورٹ میں کانگریس کا چیلنج

نئی دہلی ۔13 مارچ ۔ ( سیاست ڈاٹ کام )کانگریس نے آج سپریم کورٹ میں گورنر گوا مردولا سنہا کے منوہر پاریکر کو جو بی جے پی مقننہ پارٹی کے قائد منتخب کئے گئے ہیں، ریاست کا آئندہ چیف منسٹر مقرر کرنے کے فیصلے کو چیلنج کردیا ۔ عجلت میں داخل کردہ درخواست کل شام دیر گئے داخل کی گئی تھی جو چیف جسٹس جے ایس کہر کی قیامگاہ پر اُن کے سپرد کی گئی تھی ۔ چیف جسٹس نے کل درخواست کی عاجلانہ سماعت سے اتفاق کرلیا ہے ۔ انھوں نے سپریم کورٹ کی خصوصی بنچ سے جو ہولی کی ایک ہفتہ طویل تعطیلات کے دوران عاجلانہ نوعیت کے مقدمات کی سماعت کے لئے تشکیل دی ہے ،کو ہدایت دی کہ سی ایل پی قائد چندرکانت تاؤلیکر کی درخواست کی فوری سماعت کی جائے، درخواست میں کہا گیا ہے کہ پاریکر کی بحیثیت چیف منسٹر حلف برداری پر حکم التواء جاری کیا جائے ۔ کانگریس قائد چندرکانت کی ہدایت پر ان کے قانونی مشیر دیودت کامت نے درخواست پیش کی ہے ۔ سینئر ایڈوکیٹ ابھیشیک منو سنگھوی اور مرکز کے علاوہ گوا کی سیاسی پارٹیاں اس مقدمہ میں پیروی کریں گی ۔ گوا سی ایل پی قائد کا ادعا ہے کہ کانگریس انتخابات میں سب سے بڑی واحد پارٹی بن کر اُبھری ہے اور دستور ہند کے مطابق واحد سب سے بڑی پارٹی کو تشکیل حکومت کی دعوت دینے کی گورنر پابند ہیں اور اُسے ایوان میں اکثریت ثابت کرنے کی ہدایت دے سکتے ہیں۔ گورنر نے عاجلانہ طورپر یہ فیصلہ کیا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT