Thursday , January 18 2018
Home / کھیل کی خبریں / پانچ مسلسل ناکامیوں کے بعد پاکستان کی جیت

پانچ مسلسل ناکامیوں کے بعد پاکستان کی جیت

دبئی۔ 9 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) شاہد آفریدی کی جوش کے بجائے ہوش والی بیٹنگ اور حارث سہیل کی خاموش مگر انتہائی ذمہ دارانہ اننگز نے نیوزی لینڈ کے خلاف پہلے ونڈے میں پاکستانی ٹیم کی لاج رکھ لی۔دبئی کے اس پہلے ونڈے میں بھی ٹاپ آرڈر بیٹسمینوں کی مایوس کن کارکردگی نے شکست کا پورا پورا سامان کر لیا تھا، لیکن شاہد آفریدی اور حارث سہیل کے در

دبئی۔ 9 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) شاہد آفریدی کی جوش کے بجائے ہوش والی بیٹنگ اور حارث سہیل کی خاموش مگر انتہائی ذمہ دارانہ اننگز نے نیوزی لینڈ کے خلاف پہلے ونڈے میں پاکستانی ٹیم کی لاج رکھ لی۔دبئی کے اس پہلے ونڈے میں بھی ٹاپ آرڈر بیٹسمینوں کی مایوس کن کارکردگی نے شکست کا پورا پورا سامان کر لیا تھا، لیکن شاہد آفریدی اور حارث سہیل کے درمیان ساتویں وکٹ کے لئے 110 رنز کی شراکت نے پانچ مسلسل ناکامیوں کے بعد پاکستانی ٹیم کو پہلی جیت سے ہمکنار کرنے میں کلیدی کردار ادا کیا۔آفریدی 61 رنز کی شاندار اننگز کھیل کر آؤٹ ہوئے تو پاکستان کو 13 گیندوں پر اتنے ہی رنز درکار تھے۔ حارث سہیل کے ناقابل شکست 85 رنز نے تین وکٹوں کی جیت پر مہرتصدیق ثبت کی تو تین ہی گیندیں باقی بچی تھیں۔یونس خان ایک بار پھر ونڈے ٹیم کی زینت بنے،

تو ساتھ ہی اسد شفیق بھی بیٹنگ لائن کا حصہ بنا دیے گئے۔دونوں کا بیک وقت کھیلنا اس لیے بھی حیران کن تھا کہ یہ دونوں ایک ہی انداز میں کھیلنے والے بیٹسمین ہیں جو سیٹ ہونے کے لئے وقت لیتے ہیں۔ یونس خان نے صرف چار رنز بنانے کے لئے 14 گیندیں کھیلیں جبکہ اسد شفیق نے صرف پانچ رنز بنانے کے لئے 17 گیندوں ضائع کیں اور یوں آنے والے بیٹسمینوں پر دباؤ بڑھ گیا۔مصباح الحق نے یہ دباؤ محسوس کیا لیکن وہ اس سے نہ نکل سکے۔تاہم شاہد آفریدی نے اپنے مزاج پر مکمل طور پر قابو رکھتے ہوئے سرجھکا کر بیٹنگ کی۔ ٹوئنٹی 20 میچوں میں ناکامی کے بعد حارث سہیل کو خود کو منوانے کا ایک اور موقع ملا تھا جسے انھوں نے ہاتھ سے نہیں جانے دیا اور فتح گر بن کر لوٹے۔اس سے قبل پاکستانی بولنگ دو مختلف روپ میں نظر آئی۔ 40 اووروں تک صورت حال پاکستانی ٹیم کے قابو میں تھی لیکن آخری دس اووروں میں بننے والے 78 رنز نے نیوزی لینڈ کو نیا حوصلہ دے دیا۔

TOPPOPULARRECENT