Wednesday , December 19 2018

پاکستانی رینجرس کی شلباری میں بی ایس ایف کا ایک جوان ہلاک

جموں ۔ 5 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) پاکستان نے پھر ایک بار مورٹار حملوں اور شلباری کا احیاء کرتے ہوئے آج جموں و کشمیر کے اضلاع سامبا اور کتھوا میں سرحدی چوکیوں اور بین الاقوامی سرحد کے قریب واقع شہری علاقوں کو نشانہ بنایا جس کے نتیجہ میں بی ایس ایف کا ایک جوان ہلاک ہوگیا۔ بی ایس ایف کے ایک عہدیدار نے پی ٹی آئی سے کہا کہ ’’پاکستانی رینجرس ن

جموں ۔ 5 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) پاکستان نے پھر ایک بار مورٹار حملوں اور شلباری کا احیاء کرتے ہوئے آج جموں و کشمیر کے اضلاع سامبا اور کتھوا میں سرحدی چوکیوں اور بین الاقوامی سرحد کے قریب واقع شہری علاقوں کو نشانہ بنایا جس کے نتیجہ میں بی ایس ایف کا ایک جوان ہلاک ہوگیا۔ بی ایس ایف کے ایک عہدیدار نے پی ٹی آئی سے کہا کہ ’’پاکستانی رینجرس نے آج دوپہر 2 بجے سامبا اور کتھوا سیکٹرس کو بڑے پیمانے پر مورٹار حملوں اور شلباری کا نشانہ بنایا۔ پاکستان کی جانب سے جنگ بندی کی اس تازہ ترین خلاف ورزی کے ساتھ ہی دونوں طرف سے بڑے پیمانے پر فائرنگ کے تبادلے کا ایک نیا مرحلہ شروع ہوگیا۔ بی ایس ایف عہدیدار نے کہا کہ پاکستانی شلباری میں بی ایس ایف کا ایک جوان شہید ہوگیا اور ہندوستانی فورس نے اس حملے کا پوری شدت کے ساتھ جواب دیا۔ متوفی جوان کی شناخت کانسٹیبل داویندر کمار کی حیثیت سے کی گئی ہے جو سامبا سیکٹر کی کھورا سرحدی چوکی پر تعینات تھا۔ عہدیداروں نے کہا کہ گزشتہ ایک ہفتہ سے جاری پاکستانی فائرنگ اور شلباری میں تاحال 4 جوان اور ایک خاتون ہلاک ہوئے ہیں۔ جوابی کارروائی میں 5 پاکستانی رینجرس اور ایک لڑکی ہلاک ہوئی ہے۔ کتھوا کے ڈپٹی کمشنر شاہد اقبال چودھری نے کہا کہ پاکستان نے تمام سرحدی دیہاتوں پر شلباری اور فائرنگ کا آغاز کردیا جہاں ہندوستانی سرحد کے اِس پار 57 مواضعات میں رہنے والے 5 ہزار افراد کی زندگیوں کو خطرہ لاحق ہے۔ انہوں نے کہا کہ ’’ہم امدادی مہم شروع کرنے کے موقف میں نہیں ہیں۔ قبل ازیں آج دن میں چھوٹے اسلحہ سے فائرنگ کی جارہی تھی لیکن اب وہ (پاکستانی رینجرس) بھاری مورٹار شیلس استعمال کررہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ صورتحال انتہائی سنگین اور تشویشناک ہے۔ پاکستانی شیلس ہندوستانی علاقہ میں تین تا چار کیلو میٹر اندر تک پہنچ رہے ہیں۔ پاکستانی رینجرس نے کل خاموشی اختیار کرنے کے بعد آج دوبارہ جنگ بندی کی خلاف ورزیوں کا سلسلہ شروع کردیا اور کتھوا اور سامبا سیکٹرس میں سرحدی چوکیوں کو نشانہ بنایا جس پر بی ایس ایف کو جوابی کارروائی کرنی پڑی۔عہدیداروں نے پی ٹی آئی سے مزید کہا کہ ’’پاکستانی رینجرس نے ضلع سامبا کی ایک چوکی پر چھوٹے اسلحہ سے فائرنگ کے ساتھ جنگ بندی کی خلاف ورزی کا دوبارہ آغاز کیا اور ضلع کتھوا کے دو علاقوں میں بھی کل رات شلباری کی گئی تھی۔ پاکستانی رینجرس نے 3 جنوری سے 4 جنوری کی شام تک فائرنگ نہیں کی تھی۔ اس دوران سرحدی علاقوں سے کئی افراد محفوظ مقامات کو منتقل ہورہے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT