Monday , November 19 2018
Home / پاکستان / پاکستانی سپریم کورٹ کے جج کی قیامگاہ پر فائرنگ

پاکستانی سپریم کورٹ کے جج کی قیامگاہ پر فائرنگ

لاہور۔15اپریل ( سیاست ڈاٹ کام ) پاکستانی سپریم کورٹ کے ایک ججس کی قیامگاہ پر نامعلوم بندوق بردار نے آج اندھا دھند فائرنگ کی جس کی پاکستان میں بڑے پیمانہ پر مذمت کی گئی ۔ حالانکہ جسٹس اعجاز الاحسن کی قیامگاہ واقع ماڈل ٹاؤن لاہور پر نامعلوم بندوق بردار نے اندھا دھند فائرنگ کی تھی ۔ جسٹس احسن نے اپنے بیان میں کہا کہ اتوار کے دن 4:30بجے شب سے 9:00بجے صبح تک فائرنگ کی گئی ۔ پاکستانی پنجاب کے آئی جی پی عارف نواز خان کو طلب کرلیا گیا ۔ چیف جسٹس شخصی طور پر حالات پر نظر رکھے ہوئے ہیں ۔ ایک فارنسک ٹیم بھی موقع واردات پر پہنچ گئی ہے تاکہ امکانی ثبوت تلاش کئے جاسکیں اور فائرنگ کی نوعیت کا تعین کیا جاسکے ۔ پولیس عہدیداروں نے یہ جاننے کی کوشش شروع کردی ہے کہ یہ منصوبہ بند حملہ تھا یا بغیر سوچے سمجھے فائرنگ کی گئی تھی ۔ پولیس کے بموجب ایک باب الداخلہ پر اور باورچی خانہ کے دروازے پر دو گولیاں چلائی گئی ۔ اعلیٰ سطحی پولیس کمانڈوز نے علاقہ کا محاصرہ کرلیا ہے اور تحقیقات جاری ہیں ۔ پولیس کے ترجمان نیاز حیدر نے کہا کہ رینجرجسٹس احسن کی قیامگاہ پر تعینات کردیئے گئے ہیں ۔ وزیر اعظم پاکستان شاہدخاقاں عباسی ‘ چیف منسٹر پاکستانی پنجاب شہباز شریف ‘ پاکستان پیپلز پارٹی کے صدر نشین بلاول بھٹو اور سپریم کورٹ بار اسوسی ایشن و لاہور ہائیکورٹ باراسوسی ایشن نے فائرنگ کی مذمت کی ہے ۔پاکستان پیپلز پارٹی کے معاون صدرنشین آصف علی زرداری نے حملہ کو پریشان کن قرار دیتے ہوئے اس کی عدالتی تحقیقات کا مطالبہ کیا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT