Monday , January 22 2018
Home / پاکستان / پاکستانی طالبان سربراہ اور دیگر کی گرفتاری کے لیے ناقابل ضمانت وارنٹس

پاکستانی طالبان سربراہ اور دیگر کی گرفتاری کے لیے ناقابل ضمانت وارنٹس

کراچی ۔ 20 ۔ دسمبر : ( سیاست ڈاٹ کام ) : پاکستان کی ایک انسداد دہشت گردی عدالت نے تحریک طالبان پاکستان کے سربراہ ملا فضل اللہ ، طالبان ترجمان شاہد اللہ شاہد اور دیگر 9 کے خلاف ناقابل ضمانت گرفتاری وارنٹس جاری کئے ہیں ۔ پاکستان نے ہندستان کو یہ تیقن دیا ہے کہ وہ ممبئی دہشت گرد حملہ کے اصل سازشی ذہن رکھنے والے ذکی الرحمن لکھوی کو رہا نہیں ک

کراچی ۔ 20 ۔ دسمبر : ( سیاست ڈاٹ کام ) : پاکستان کی ایک انسداد دہشت گردی عدالت نے تحریک طالبان پاکستان کے سربراہ ملا فضل اللہ ، طالبان ترجمان شاہد اللہ شاہد اور دیگر 9 کے خلاف ناقابل ضمانت گرفتاری وارنٹس جاری کئے ہیں ۔ پاکستان نے ہندستان کو یہ تیقن دیا ہے کہ وہ ممبئی دہشت گرد حملہ کے اصل سازشی ذہن رکھنے والے ذکی الرحمن لکھوی کو رہا نہیں کرے گا ۔ ڈان آن لائن نے رپورٹ دی ہے کہ عدالت نے یہ گرفتاری وارنٹس جون 2014 میں کراچی ایرپورٹ پر حملہ کرنے کی پاداش میں فضل اللہ اور دیگر کے خلاف جاری کئے ہیں ۔ قبل ازیں ایک غیر مصدقہ رپورٹ میں تاہم بتایا گیا تھا کہ تحریک طالبان پاکستان کے صدر ہفتہ کی صبح افغانستان میں بمباری میں ہلاک ہوئے ہیں ۔

کراچی ایرپورٹ کے قدیم ٹرمنل کا گھیراؤ کرتے ہوئے دہشت گردوں نے رات بھر فوج سے لڑائی کی تھی ۔ اس لڑائی میں تمام 10 حملہ آوروں کے بشمول کم از کم 30 افراد ہلاک ہوئے تھے ۔ حملہ کی ذمہداری قبول کرتے ہوئے طالبان ترجمان شاہد اللہ شاہد نے کہا تھا کہ یہ حملہ سابق طالبان سربراہ حکیم اللہ محسود کی ہلاکت کا انتقام لینے کے لیے کیا گیا ہے ۔ حکیم اللہ محسود اس سال کے اوائل میں امریکی ڈرون حملے میں ہلاک ہوئے تھے ۔ اس دوران پاکستانی وزیر اعظم کے مشیر برائے قومی سلامتی و بیرونی امور سرتاج عزیز نے کہا کہ ذکی الرحمن لکھوی کو اس کیس کے سلسلہ میں رہا نہیں کیا جائے گا ۔ انسداد دہشت گردی عدالت نے جمعرات کو لکھوی کی ضمانت منظور کی تھی جس پر ہندوستان نے شدید تشویش کا اظہار کیا تھا ۔۔

پاکستانی طالبان سربراہ ملا فضل اللہ ہلاک ؟
اسلام آباد ۔ 20 ۔ دسمبر : ( سیاست ڈاٹ کام ) : پاکستان کے شہر پشاور میں طالبان حملہ کے پیش نظر حکومت اور فوج نے دہشت گردی کے خلاف اپنی کارروائیوں میں شدت پیدا کردی ہے ۔ غیر مصدقہ اطلاعات میں بتایا گیا ہے کہ آج صبح کی اولین ساعتوں میں افغانستان کے اندر کی گئی بمباری میں تحریک طالبان پاکستان کے سربراہ ملا فضل اللہ ہلاک ہوئے ہیں ۔ پاکستانی وزارت دفاع کے ایک غیر تصدیق شدہ ٹوئیٹر اکاونٹ میں بتایا گیا ہے کہ وزارت دفاع کی جانب سے ملا فضل اللہ کی ہلاکت کی خبروں کی توثیق کی گئی ہے تاہم ذرائع کے مطابق اس طرح کی خبر جاری کرنے کا اختیار صرف انٹر سرویس پبلک ریلیشنس کے ڈائرکٹر جنرل کو حاصل ہے ۔
پاکستانی فوج نے طالبان کے خلاف بڑے پیمانے پر جنگ چھیڑ دی ہے اور طالبان کے گڑھ کو تباہ کیا جارہا ہے ۔ اس خبر کے بارے میں افغان امور کے ماہر سلیم صافی نے بھی کہا ہے کہ جن ذرائع سے خبریں آرہی ہیں وہ مصدقہ نہیں ہیں ۔۔

TOPPOPULARRECENT