Saturday , December 15 2018

پاکستانی فوج نے بی ایس ایف جوان کا گلا کاٹ دیا، سرحد پر ہائی الرٹ

باڑ کی صفائی کے دوران جوان مہلک فائرنگ سے برسرموقع ہلاک ہوا
پاکستانی دستوں نے مہلوک کا گلا کاٹ کر بے رحمی کی حد کردی
حکومت ہند اور سکیورٹی انتظامیہ سخت برہم، مناسب وقت جوابی کارروائی کا عہد

جموں ؍ نئی دہلی ، 19 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام)پاکستانی دستوں نے جموں میں بین الاقوامی سرحد (آئی بی) کے پاس ایک بی ایس ایف جون کو شوٹ کرکے ہلاک کردینے کے بعد اُس کا گلا کاٹ ڈالا ہے، عہدیداروں نے چہارشنبہ کو یہ بات کہی۔ بے رحمانہ اور ’’عدیم النظیر‘‘ واقعہ جو منگل کو رام گڑھ سیکٹر میں پیش آیا، اس پر سکیورٹی فورسیس نے سارے آئی بی اور لائن آف کنٹرول (ایل او سی) کے پاس ’’ہائی الرٹ‘‘ جاری کردیا جبکہ بارڈر سکیورٹی فورس (بی ایس ایف) نے اپنے ہم منصب پاکستان رینجرز کے پاس سخت شکایت درج کرائی ہے۔ سرکاری ذرائع نے کہا کہ ہیڈ کانسٹبل نریندر کمار کی نعش پر گولیوں کے تین نشانات بھی پائے گئے اور اسے انڈو۔پاک باڑھ سے قبل ایک علاقہ سے چھ گھنٹے بعد ہی برآمد کیا جاسکا کیونکہ پاکستانی طرف سے سرحد کے تقدس کو برقرار رکھنے اور یہ یقینی بنانے کی اپیلوں پر کچھ جواب نہیں دیا گیا کہ بی ایس ایف کی سرچ پارٹیوں پر فائرنگ نہ کی جائے۔ ذرائع نے کہا کہ پاکستان رینجرز سے لاپتہ جوان کو ڈھونڈنے کیلئے جوائنٹ پٹرولنگ میں حصہ لینے کیلئے کہا گیا، لیکن وہ صرف کچھ دور تک آئے اور پھر علاقہ میں پانی جمع رہنے کے مسائل کا حوالہ دیا جس نے انھیں مربوط کارروائی کو آگے بڑھانے سے روک دیا۔ پھر بی ایس ایف نے غروب آفتاب تک انتظار کیا اور جوکھم بھرا آپریشن شروع کیا کہ لاپتہ جوان کی نعش کو رات دیر گئے اپنی چوکی کو واپس لایا جاسکے۔ سکیورٹی انتظامیہ کے عہدیداروں نے کہا کہ جوان کے ساتھ بہیمانہ واقعہ جو شاید آئی بی پر پہلی بار پیش آیا، اسے حکومت اور وزارت امور خارجہ نے بہت سنجیدگی سے لیا ہے ڈائریکٹر جنرل آف ملٹری آپریشنس (ڈی جی ایم او) سے بھی اپنے پاکستانی ہم منصب حکام کے پاس یہ مسئلہ اٹھانے کی توقع ہے۔ انھوں نے مزید کہا کہ بی ایس ایف پارٹی جو باڑھ کے قریب اُگ آنے والی طویل گھاس کو کاٹنے کیلئے گئی تھی منگل کو صبح 10.40 بجے پہلے اُس پر فائرنگ کی گئی، اُس کے بعد ہندوستانی طرف سے لگاتار فون کالس اور کمیونکیشن کے تبادلوں کا سلسلہ شروع ہوا تاکہ سرحد پار کرکے اُس جوان کا پتہ چلایا جائے جسے پہلے لاپتہ بتایا گیا تھا۔ بی ایس ایف نے تو ان تبدیلیوں پر کوئی تبصر نہیں کیا، لیکن ذرائع نے کہا کہ فورس نے اپنی تمام تر معلومات کے ساتھ آئی بی پر چوکس کیا تھا اور آرمی کو ایل او سی پر چوکنا رہنے پر زور دیا تھا۔ ایک عہدہ دار نے کہا کہ جوان کی نعش پر گولیوں کے تین زخم ہیں اور اُس کا گلا کٹا ہوا ہے۔ یہ بڑا عجیب واقعہ ہے جو انڈین فورس کے ساتھ آئی بی کے پاس پیش آیا اور پاکستانی فوجی اس کے پس پردہ کارفرما ہیں۔ بی ایس ایف اور دیگر فورسیس مناسب وقت پر جوابی کارروائی کریں گے۔ انھوں نے مزید کہا کہ جوان کو برسرموقع ہلاک کیا گیا جب اسے سرحد پار سے ہلاکت خیز گولیاں لگیں ۔ بی ایس ایف کے جموں فرنٹیئر نے گزشتہ روز اس واقعہ کے بارے میں بیان جاری کیا تھا لیکن گلا کاٹنے کے تعلق سے کوئی بات نہیں کی تھی۔

TOPPOPULARRECENT