Sunday , July 22 2018
Home / دنیا / پاکستان سے عسکریت پسندوں کے خلاف اقدامات کا مطالبہ

پاکستان سے عسکریت پسندوں کے خلاف اقدامات کا مطالبہ

صدر امریکہ کاوزیراعظم پاکستان کو پیغام‘نائب صدر امریکہ نے وزیراعظم تک ٹرمپ کا پیغام پہنچایا

واشنگٹن ۔18مارچ ( سیاست ڈاٹ کام ) امریکہ کی جانب سے ایک بار پھر پاکستان سے مطالبہ کیا گیا ہے کہ وہ طالبان اور دیگر جنگجوگروپوں کے خلاف لازمی مزید اقدامات کرے۔وائٹ ہائوس سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ وزیر اعظم پاکستان شاہد خاقان عباسی سے امریکی نائب صدر مائیک پینس نیاپنی رہائش گاہ پر ملاقات کی۔وائٹ ہائوس کے مطابق مائیک پنس نے امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ کی درخواست کو ایک بار پھر دہرایا جس میں پاکستان پر زور دیا گیا ہے کہ وہ طالبان، حقانی نیٹ ورک اور دیگر دہشت گرد گروپوں کی مسلسل موجودگی کے حوالے سے مزید اقدامات اٹھائے۔وائٹ ہاوس کے مطابق مائیک پینس کا کہنا تھا کہ پاکستان امریکہ کے ساتھ مل کر کام کرسکتا ہے اور اسے لازمی طور پر کرنا چاہیے۔ وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی نے واشنگٹن میں امریکی نائب صدر مائیک پنس سے ملاقات کی تھی، ملاقات امریکی نائب صدر کی مائیک پنس کی رہائش گاہ پر ہوئی جو 40منٹ تک جاری رہی۔ذرائع کے مطابق ملاقات میں پاک امریکہ تعلقات، افغانستان سمیت خطے کی صورت حال پر تبادلہ خیال کیا گیا،وزیر اعظم نے دہشت گردی کے خلاف پاکستان کی کامیابیوں اور قربانیوں کا ذکر بھی کیا تھا۔ وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی نجی دورے پر امریکہ گئے ہوئے ہیں۔امریکی نائب صدر مائیکل پینس نے پاکستانی وزیر اعظم سے کہا ہے کہ ان کے ملک کو طالبان اور دیگر شدت پسندوں کے خلاف مزید اقدامات کرنے ہوں گے۔مائیکل پینس یہ مطالبہ شاہد خاقان عباسی کے ساتھ ایک ملاقات میں دہرایا۔انھوں نے پاکستانی وزیرِ اعظم سے کہا کہ ان کا ملک کو طالبان اور دیگر شدت پسندوں کے سدّ باب کے لیے ’لازماً مزید‘ اقدامات کرنے ہوں گے۔خبر رساں ادارے اے ایف پی کے مطابق وائٹ ہاؤس کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ امریکی نائب صدر نے صدر ڈونلڈ ٹرمپ کا پیغام پہنچاتے ہوئے کہ شاہد خاقان عباسی سے کہا ہے کہ ’حکومت پاکستان کو اس کے ملک میں سرگرم طالبان، حقانی نیٹ ورک اور دیگر شدت پسند گروہوں کی موجودگی کے حوالے سے مزید کارروائیاں کرنا ہوں گی۔‘امریکی نائب صدر مائیکل پینس نے پاکستان پر زور دیا کہ ’وہ اس معاملے میں امریکہ کے ساتھ مل کر کام کر سکتا ہے اور اسے ایسا کرنا چاہیے۔‘پاکستان کے وزیرِ اعظم شاہد خاقان عباسی کی امریکی نائب صدر سے ملاقات کی مزید تفصیلات تاحال واضح نہیں ہیں۔تاہم پاکستانی ذرائع ابلاغ نے امریکی سرکاری ذرائع کے مطابق خبر دی ہے کہ یہ ملاقات پاکستان کی درخواست پر امریکی نائب صدر کے گھر پر ہوئی۔ تاہم ان کے علاوہ کوئی بھی امریکی یا پاکستانی عہدیدار دونوں رہنماؤں کی ملاقات کے دوران موجود نہیں تھا۔وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی اور امریکی نائب صدر مائیکل پینس کے درمیان ہونے والی اس ملاقات میں دونوں رہنماؤں نے افغانستان پر ‘اپنے نقطہ نظر کی وضاحت’ کی۔

TOPPOPULARRECENT